Friday, September 25, 2020  | 6 Safar, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

لداخ میں چین سے جھڑپ، 20بھارتی فوجی ہلاک، 45گرفتار

SAMAA | - Posted: Jun 16, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 16, 2020 | Last Updated: 3 months ago

لداخ کی وادی گلوان میں چینی فوج کے ساتھ جھڑپ میں کرنل سمیت 20 بھارتی فوجی ہلاک ہوگئے اور 45 کو گرفتار کرلیا گیا۔ چينی دفتر خارجہ کے مطابق بھارت نے لائن آف ایکچوول کنٹرول کی دو بار خلاف ورزی کی۔ بھارتی فوج نے جانی نقصان کا اعتراف کرلیا۔

لداخ کی وادی گلوان ميں پیر اور منگل کی رات بھارتی فوج کی اشتعال انگیزی، لائن آف ایکچوول کنٹرول کی خلاف ورزی اور جارحیت کا چینی فوج نے بھرپور جواب دیا، چھڑپ ميں کرنل سميت 20 فوجی ہلاک اور 45 گرفتار کرلئے گئے۔

بھارتی فوج کی جانب سے جاری اعلامیے میں کرنل سمیت 20 فوجیوں کی ہلاکت کا اعتراف کیا گیا ہے۔ بھارتی فوج نے ابتداء میں افسر سمیت 3 فوجیوں کی ہلاکت کا اعتراف کیا تھا، تاہم نئے بیان میں کہا گیا ہے کہ چینی فوج کے ساتھ جھڑپ میں شدید زخمی ہونے والے مزید 17 فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں۔

عالمی ميڈيا کے مطابق چين سے جھڑپ میں 34 بھارتی فوجی لاپتہ ہيں، جن کے بارے ميں خدشے کا اظہار کيا جارہا ہے کہ انہیں گرفتار کرلیا گیا ہے۔

چينی وزارتِ خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ بھارتی فوجوں نے پير کو 2 بار سرحد پار کی، انہوں نے چینی فوجيوں کو اشتعال دلايا، ان پر حملے کئے، جس کے نتيجنے ميں دونوں ملکوں کی فوجوں کے درميان زبردست جھڑپ ہوئی۔

چينی دفتر خارجہ نے توقع ظاہر کی ہے کہ بھارت کشيدگی ميں اضافے سے بچے گا۔

چین اور بھارت کے مابین تقریباً ڈیڑھ ماہ سے سرحدی جھڑپیں جاری ہیں، دونوں جانب سے اعلیٰ سطح پر فوجی رابطوں کے باوجود کشیدگی میں کمی نہیں آسکی ہے۔

بھارت طويل عرصے سے چينی سرحد کے قريب غير قانونی طور پر

شاہراہ تعمير کرنے کی کوششوں ميں ہے، جس کے سبب تنازع مزید شدت اختیار کر گیا تاہم 40 سالہ تاریخ میں پہلی بار ہے کہ چین اور بھارت کے درمیان ہلاکت خیز جھڑپ ہوئی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube