Tuesday, October 20, 2020  | 2 Rabiulawal, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

چینی فوج کے ساتھ جھڑپ، افسر سمیت 3بھارتی فوجی ہلاک

SAMAA | - Posted: Jun 16, 2020 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jun 16, 2020 | Last Updated: 4 months ago

چین اور بھارت کے سرحدے علاقے لداخ کی گلوان وادی میں دونوں افواج کے درمیان جھڑپ میں ایک افسر سمیت 3 بھارتی فوجی ہلاک ہوگئے۔ عالمی میڈیا کے مطابق واقعے کے بعد سے 34 بھارتی فوجی لاپتہ ہیں۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق بھارتی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ پیر کی شب پیش آنے والے واقعے میں چینی فوج کو بھی جانی نقصان اٹھانا پڑا ہے، تاہم اب تک اس کی تصدیق نہیں ہوسکی۔

بھارت اور چین کی افواج مغربی ہمالیہ کے خطے وادی گلوان میں ہفتوں سے آمنے سامنے کھڑی ہیں اور دونوں ممالک نے ایک دوسرے پر اس متنازع علاقے میں دراندازی کا الزام عائد کیا ہے۔

ماہرین کے مطابق چین اور بھارت کا یہ متنازع علاقہ کئی دہائیوں سے پرامن رہا ہے، تاہم 1975ء کے بعد پہلی بار ہلاکت خیز جھڑپیں ہوئی ہیں۔

عالمی ميڈيا کے مطابق چين سے جھڑپوں کے بعد 34 بھارتی فوجی لاپتہ ہيں، خدشہ ہے کہ ان فوجیوں کو چین نے گرفتار کرلیا یا یہ فوجی مارے گئے ہيں۔

چینی وزارت خارجہ نے بھارت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کوئی بھی یکطرفہ اقدام اٹھانے سے باز رہے اور کشیدگی کو بڑھاوا نہ دے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق بیجنگ میں چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ بھارتی فوجیوں نے دونوں ممالک کے درمیان طے شدہ اتفاق رائے کی سنگین خلاف ورزی کرتے ہوئے چینی اہلکاروں کو اشتعال دلایا اور ان پر حملہ کیا، جس سے جھڑپ کا آغاز ہوا۔

بھارتی فوج کا بیان میں کہنا ہے کہ وادی گلوان میں جاری کشیدگی کے خاتمے کی کوششوں کے دوران گزشتہ شب تصادم ہوا جس میں دونوں جانب ہلاکتیں ہوئی ہیں، اس تصادم میں بھارتی فوج کے ایک افسر اور 2 فوجی جوان ہلاک ہوگئے۔

بھارتی فوجی کا مزید کہنا تھا کہ کشیدہ صورتحال کے خاتمے کیلئے دونوں ممالک کے سینیئر فوجی عہدیدار تصادم کے مقام پر ملاقات کررہے ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
INDIA, PAKISTAN, CHINA, LADAKH, BORDER CLASH
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube