Saturday, July 4, 2020  | 12 ZUL-QAADAH, 1441
ہوم   > بین الاقوامی

بھارت میں لینڈ سلائیڈنگ، 20 افراد ہلاک

SAMAA | - Posted: Jun 2, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jun 2, 2020 | Last Updated: 1 month ago

 بھارت کی شمال مشرقی ریاستوں میں مسلسل تین دن تک ہونیوالی پری مون سون بارشوں کے باعث لینڈ سلائیڈنگ سے 10 بچوں سمیت ایک ہی گاؤں کے 20 افراد ہلاک ہوگئے ہیں، مرنیوالوں میں ایک ہی خاندان کے 7 افراد بھی شامل ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست آسام کے مختلف علاقوں میں لینڈ سلائیڈنگ کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 7 افراد سمیت 20 ہلاک ہوگئے، مرنیوالوں میں 10 بچے بھی شامل ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق وزیر جنگلات پریمل سوکلابیدیا کا کہنا ہے کہ جنوبی آسام ریاست کی باراک وادی میں لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے کئی مکان تباہ ہوگئے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ ریسکیو اہلکاروں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ انہیں ملبے سے مزید لاشیں مل سکتی ہیں اور ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق مختلف علاقوں میں لینڈ سلائیڈنگ کی اطلاعات کے بعد ڈسٹرکٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ کا عملہ امدادی کاموں کیلئے روانہ ہوگیا، لکھی پور میں ایک خاندان کے 7 افراد جبکہ ایک خاندان کے 5 افراد کی لاشیں نکال لی گئیں، ہیلاکنڈی کے علاقے میں 4 بچوں سمیت 7 افراد زندگی کی بازی ہارگئے۔

رپورٹس کے مطابق کچار کے کولاپور گاؤں میں سات افراد مٹی کے تودے کے نیچے دب کر ہلاک ہوگئے، جن میں 3 خواتین اور 4 مرد شامل تھے۔

کئی روز سے شدید بارشوں اور سیلاب کی صورتحال سے نبرد آزما بھارتی ریاست آسام میں اب تک 2 لاکھ مکانات تباہ ہوچکے ہیں، حالیہ ہفتوں میں 6 ہزار 500 ایکڑ پر فصلوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
INDIA, RAIN, STORM, FLOOD, ASSAM, LANDSLIDING
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube