Sunday, July 12, 2020  | 20 ZUL-QAADAH, 1441
ہوم   > معیشت

لاک ڈاؤن: 25ارب پتیوں کی دولت میں 255ارب ڈالر کااضافہ

SAMAA | - Posted: May 27, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: May 27, 2020 | Last Updated: 2 months ago

لاک ڈاؤن کا کمال، دنيا کے 25 ارب پتی ٹائيکونز نے صرف 2 ماہ ميں 255 ارب ڈالر کمالیے، عالمی جريدے فوربز نے اعداد و شمار جاری کردیئے۔

دنیا بھر میں جہاں کرونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن کے نتیجے میں غریب اور متوسط طبقہ شدید مالی بحران کا شکار ہے، وہیں دنیا کے ارب پتیوں کی دولت میں مزید اضافہ ہورہا ہے۔

عالمی جریدے فوربز کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق 2 ماہ کے لاک ڈاؤن میں دنیا کے 25 ارب پتی افراد کی دولت میں 255 ارب ڈالر کا اضافہ ہوگیا۔

عالمی جريدہ کہتا ہے جو دو ماہ پہلے بھی امير ترين تھے، وہ آج مزيد کھرب پتی ہوچکے ہيں جبکہ امريکا سميت دنيا بھر کی اسٹاک مارکيٹ اس دوران شديد مندی کا شکار رہی ہے۔

فيس بک کے مالک مارک زکربرگ ڈالر کمانے والوں ميں سرفہرست ہيں، 2 ماہ ميں فيس بک کے شیئرز 60 فيصد تک چڑھے ہيں، 22 مئی کو ان شیئرز نے ريکارڈ قائم کيا۔

دوسرے نمبر پر ايمازون کے بانی جيف بيزوس ہیں، جن کی آن لائن سيل ريکارڈ توڑ ہوئی ہے۔

چين کی دوسری سب سے بڑی آن لائن مارکيٹ پنڈوڈو کے مالک کولن زينگ بھی اس فہرست ميں اوپر ہيں۔

بھارت کے مکيش امبانی بھی لاک ڈاؤن کے دوران زیادہ دولت کمانے والوں میں شامل ہيں، جن کی کمپنی ريلائنس پر فيس بک نے 5.7 ارب ڈالر سرمايہ کاری کر رکھی ہے۔

يوں لاک ڈاؤن ميں آن لائن دنيا کی پانچوں انگلياں گھی ميں ہيں جبکہ آف لائن دنيا غربت ميں دھنستی جارہی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
INDIA, US, FORBES, BILLIONAIRE, LOCKDOWN, COVID19, CORONAVIRUS, COVID-19, TECHNOLOGY, ONLINE BUSINESS
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube