Saturday, October 31, 2020  | 13 Rabiulawal, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

کرونا:پاکستانی نژادبرطانوی نرس نےطبی محاذ پرجان قربان کردی

SAMAA | - Posted: Apr 4, 2020 | Last Updated: 7 months ago
SAMAA |
Posted: Apr 4, 2020 | Last Updated: 7 months ago
فائل فوٹو

پاکستانی نژاد برطانوی نرس اریما نسرین ویسٹ مڈلینڈز میں کرونا وائرس کا شکار ہو کر انتقال کرگئیں۔

ایجنسی رپورٹس کے مطابق اریما کا انتقال والسال مینر اسپتال میں ہوا جہاں وہ 16 سال سے کام کر رہی تھیں۔

اریما میں 13 مارچ کو کرونا وائرس کی علامات ظاہر ہوئیں، جس کے بعد انہیں اسپتال میں رکھا گیا۔ پاکستانی نژاد برطانوی نرس 3 بچوں کی ماں تھیں۔

اریما برطانیہ میں نرسنگ کے شعبے میں کرونا وائرس کے مریضوں کی خدمت انجام دیتے ہوئے جان قربان کرنے والی ابتدائی نرسوں میں شامل ہیں۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ 36 سالہ اریما نسرین 15 سال تک اسپتال میں کلینر کے طور پر کام کرتی رہی تھیں، مگر پھر انہوں نے نرس بننے کے خواب کو تعبیر دینے کے لیے نرسنگ کی تعلیم حاصل کی۔

الجزیرہ کے مطابق اریما نسرین کو ان کے دوست ایک مثبت، روحانی، پرمزاح اور کھلے دل کی مالک شخصیت قرار دیتے تھے۔

اریما نسرین کی شہادت سے چند گھنٹے قبل 79 سالہ مصری نژاد برطانوی ڈاکٹر محمد سمیع بھی اس وائرس کے نتیجے میں شہید ہوگئے تھے۔ اس طرح برطانیہ میں کرونا وائرس سے متاثر ہوکر اب تک 5 ڈاکٹر لقہ اجل بن چکے ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube