ہوم   > بین الاقوامی

کابل: سکھوں کی مذہبی عبادت گاہ پرمسلح افرادکاحملہ

SAMAA | - Posted: Mar 25, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 25, 2020 | Last Updated: 2 months ago
یہ تصویر ٹوئٹر پر تولو نیوز سے لی گئی ہے

افغان دارالحکومت کابل میں مسلح افراد نے علی الصبح سکھوں کے گردوارے پر حملہ کرکے 4 افراد کو ہلاک کردیا۔ حملے کے وقت گردوارے میں 150 افراد موجود تھے۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی نے افغان وزیر داخلہ کے حوالے سے بتایا ہے کہ مسلح دہشت گردوں نے صبح 7 بج کر 45 منٹ پر سکھوں کی مذہبی عمارت گردوارے کو فائرنگ سے نشانہ بنایا۔ حملے کی اطلاع ملتے ہی سیکیورٹی فورسز موقع پر پہنچ گئیں اور علاقے کو سیل کردیا گیا۔

درہم شالا پر حملے میں موصول اطلاعات کے مطابق 4 افراد ہلاک، جب کہ 7 زخمی ہوئے۔ افغان وزیر داخلہ طارق ارئین کے مطابق حملہ آور فائرنگ کرتے ہوئے سکھوں کے گردوارے کے اندر داخل ہوگئے۔

حملے کے وقت بڑی تعداد میں لوگ گردوارے میں موجود تھے جو محصور ہوگئے۔ گردوارے سے لوگوں کو نکالنے کیلئے سیکیورٹی فورسز نے ریسکیو آپریشن شروع کیا۔ افغان سکھ رکن پارلیمنٹ انارکلی کہور کے مطابق گردوارے میں فیملیز صبح کے اوقات میں عبادت کیلئے جاتی ہیں۔

آخری اطلاعات25 مارچ کو صبح 11 بج کر 25 منٹ پر موصول ہوئیں۔ اس خبر میں بعد مزید تفصیلات گاہے بگاہے شامل کی جائیں گئیں۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ افغان طالبان یا کسی اور گروپ یا تنظیم کی جانب سے فی الحال حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی، تاہم ماضی میں دیگر مذاہب پر حملوں کی ذمہ داری دیکھنے میں آیا ہے کہ داعش کی جانب سے قبول کی گئی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube