Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

کروناوائرس: پرتگال کے صدر نے خود کو ’قید‘ کردیا

SAMAA | - Posted: Mar 9, 2020 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 9, 2020 | Last Updated: 2 years ago

پرتگال کے صدر مارسیلو ریبیلو ڈی سوزا نے کرونا وائرس کے خلاف احتیاطی تدبیر کے طور پر خود کو اپنے محل میں ’قید‘ کرکے اندورن اور ملک بیرون تمام سرگرمیاں معطل کردی ہیں۔

پرتگال کے میڈیا رپورٹس کے مطابق صدر ڈی سوزا نے گذشتہ ہفتے ملک کے شمالی حصے میں ایک اسکول کا دورہ کیا تھا۔ بعد ازاں اسی اسکول میں کرونا وائرس کا ایک کیس سامنے آیا جس پر اسکول بند کردیا گیا ہے۔

ایوان صدر سے جاری بیان میں وضاحت کی گئی ہے کہ کرونا وائرس کا شکار طالب صدر کے ساتھ ملاقات میں موجود نہیں تھا اور صدر پر وائرس کی کوئی علامات ظاہر نہیں ہوئیں۔ وہ صدارتی محل سے اپنی سرگرمیاں جاری رکھیں گے۔

بیان کے مطابق صدر نے صحت سے متعلق حکام کی ہدایات پر عملدرآمد کرتے ہوئے خود کو عوام کے سامنے مثال کے طور پر پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ قوم بھی ان ہدایات پر موثر انداز میں عمل کرے۔

واضح رہے کہ پرتگال میں اب تک 20 افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جبکہ ملک کے شمالی علاقوں میں کرونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے جس کے پیش نظر حکام نے حفاظتی اقدامات کا اعلان کیا ہے۔ اب تک ایک اسکول اور دو یونیورسٹیز کو بند کیا جاچکا ہے جبکہ حکام نے اسپتالوں اور جیلوں کے دورے بھی منسوخ کردیے ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube