ہوم   > بین الاقوامی

صدارت بچ گئی،ٹرمپ مواخذےمیں تمام الزامات سے بری

SAMAA | - Posted: Feb 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Feb 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago

امریکی سینیٹ نے صدرڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے کےدونوں الزامات مسترد کردیے جس کے بعد وہ اپنے عہدے پرکام جاری رکھیں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ پراختیارات کےغلط استعمال اورکانگریس کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے 2 الزامات تھے۔

امریکی سینیٹ 100 ارکان پرمشتمل ہے جس میں سے ٹرمپ پرعائد الزامات سے متعلق علیحدہ علیحدہ ووٹنگ ہوئی۔ کانگریس کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے الزام کی مخالفت میں53 ووٹ اورحمایت میں 47 ووٹ آئے، جبکہ طاقت کےغلط استعمال کے الزام کی حمایت میں 48 اور مخالفت میں 52 ووٹ آئے۔

ووٹنگ کے نیتجے میں ٹرمپ کو مواخذے کے ٹرائل سے بری کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

امریکی سینیٹ میں ڈونلڈ ٹرمپ کی پارٹی ریپبلکن پارٹی کے ارکان اکثریت میں ہیں، طاقت کے غلط استعمال کے آرٹیکل سے متعلق ووٹنگ میں ری پبلکن کے واحد سینیٹر مٹ رومنی نے بھی ٹرمپ کی مخالفت میں ووٹ دیا ۔

امریکی صدارتی الیکشن آفس سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ’’ صدر ٹرمپ کو تمام الزامات سے بری کر دیا گیا ہے اور اب دوبارہ امریکی عوام کے لیے کام کرنے کا وقت ہے۔ ڈیموکریٹس جانتے ہیں کہ وہ ٹرمپ کو مات نہیں دے سکتے اس لیے انہوں نے مواخذے کا راستہ استعمال کیا ‘‘۔

بیان میں مواخذے کی کارروائی کو حماقت قرار دیتے ہوئے مزید کہا گیا ہے کہ یہ ڈیموکریٹس کی صدارتی الیکشن مہم کا ہتھکنڈا تھی۔ مواخذے کی افواہ ختم ہو چکی اور اب اسے امریکی سیاسی تاریخ میں بطور بدترین غلطی یاد رکھا جائے گا۔

ڈیمو کریٹس کے زیر کنٹرول ایوان نمائندگان نے گزشتہ سال 18 دسمبر کو ٹرمپ کے مواخذے کی منظوری دی تھی۔

ڈیموکریٹس نے ٹرمپ پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے اپنے سیاسی مخالف جو بائیڈن کیخلاف مبینہ بدعنوانی کی تحقیقات شروع کرنے کیلئے یوکرینی صدر پر دباؤ ڈالا تھا۔

امریکی صدر نےاپنے خلاف مواخذے کی کارروائی کو سیاسی انتقام قرار دیا تھا۔ سینیٹ سے دونوں الزامات سے بری ہونے کے بعد وہ اس حوالے سے اپنا ردعمل آج دیں گے۔

ٹرمپ سے قبل 2 امریکی صدوراینڈریو جانسن اور بل کلنٹن مواخذے کی کارروائی کا سامنا کرچکے ہیں لیکن ان دونوں کو بھی امریکی سینیٹ نے بری کردیا تھا۔

حالیہ فیصلے کے بعد ٹرمپ امریکہ کی تاریخ کے پہلے صدر ہوں گے جو مواخذے کی کارروائی کا سامنا کرنے کے بعد نومبر2020 میں ایک بار پھر صدارتی انتخابات کا حصہ ہوں گے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube