ہوم   > بین الاقوامی

فرانس رافیل طیارے آج بھارت کے حوالے کرے گا

1 week ago

بھارتی وزیر دفاع آج فرانس میں ہونے والی تقریب میں باضابطہ طور پر فرانسیسی لڑاکا طیارے وصول کریں گے۔

بھارتی ذرائع ابلاغ سے جاری خبروں کے مطابق بھارتی وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ فورتھ جنریشن کے حامل فرانسیسی لڑاکا طیاروں کی وصولی کیلئے دارالحکومت پیرس پہنچ گئے ہیں۔ ان طیاروں کو حاصل کرنے کے بعد بھارت اپنے روایتی حریف پاکستان اور چین پر بھی فضائی سبقت حاصل کرلے گا۔

 

طیاروں کی حوالگی کی تقریب فرانسیسی ایئربیس میریگنیک پر منعقد ہوگی، جو بورڈیئوکس کے قریب واقع ہے۔ طیاروں کی وصولی کا اہتمام بھارتی ایئر فورس اور دوشیرا پوجا کے روز کیا گیا ہے۔

 

تقریب سے قبل بھارتی وزیر دفاع ششترا پوجا ( اسلحہ کی عبادت) میں بھی حصہ لیں گے۔ فرانسیسی ایئر بیس روانگی سے قبل بھارتی وزیر دفاع صدر ایمانوئیل میکرون سے بھی ملاقات کریں گے، جہاں دو طرفہ ملکی امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

 

بعد ازاں ایئربیس پر ہونے والی تقریب میں فرانس کے تیار کردہ رافیل لڑاکا طیاروں کی پہلی اسکواڈرن آر بی -01 بھارت کے حوالے کی جائے گی۔ بھارتی فضائیہ کی تاریخ میں یہ اب تک کی سب سے بڑی ڈیل ہے، جس کی مالیت 60،000 کروڑ روپے ہیں۔

 

بھارتی وزیر دفاع کی جانب سے طیارے میں بیٹھ کر فضائی جائزہ لینے کا بھی امکان ہے، تاہم فی الحال اس کی تصدیق نہیں ہوسکی۔ طیارے کو فرانسیسی پائلٹ اڑائیں گے، کیوں کہ بھارتی پائلٹس ابھی اس فورتھ جنریشن کے حامل طیاروں کی ٹریننگ حاصل کر رہے ہیں۔

 

بھارتی فضائیہ میں شمولیت کے بعد طیاروں کی باضابطہ حوالگی اگلے سال مئی 2020 میں پائلٹس اور عملے کی مکمل تربیت کے بعد شروع ہوجائے گی۔ بھارتی فضائیہ کے 10 پائلٹس، 10 فلائٹ انجینیرز اور 40 ٹیکنیشینز کو فرانس میں تربیت دی جارہی ہے جب کہ بقیہ طیاروں کی فرانس سے بھارت کو حوالگی اپریل 2022 تک مکمل ہوجائے گی۔ بھارت نے فرانس سے کل 36 رافیل طیارے خریدے ہیں۔

 

اس سے قبل بھارتی فضائیہ کے ڈپٹی ایئر چیف وی آر جدید جنگی رافیل طیارہ میں ایک گھنٹے تک فضا میں پرواز بھی کرچکے ہیں۔ انہوں نے دوران پرواز طیارے کی کارکردگی اور افعال کا جائزہ لینے کے بعد اطمینان کا اظہار کیا۔ تکنیکی حوالگی کے کامیاب مراحل کے بعد اب رافیل طیاروں کی باقاعدہ آفیشل حوالگی کا مرحلہ 8 اکتوبر کو فرانس میں ہوگی۔

 

ایک اندازے کے مطابق حاصل کیے گئے ایک طیارے کی قیمت 1666 کروڑ روپے بنتی ہے۔

 

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ بھارت کی سپریم کورٹ نے رافیل ڈیل کی خفیہ دستاویزات کی جانچ پڑتال کا حکم جاری کیا تھا، مودی سرکار کو طیاروں کی خریداری میں کرپشن کے الزامات کا سامنا ہے۔ بھارت کی دوسری بڑی سیاسی جماعت کانگریس پارٹی کے صدر راہول گاندھی نے گزشتہ ماہ دعویٰ کیا تھا کہ رافیل طیاروں کی ڈیل میں براہ راست نریندرمودی کا نام آرہا ہے، بھارتی وزیر اعظم نے 30 ہزار کروڑ روپے امبانی کی جیب میں ڈالے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
#RunAwayForce_IAF, INDIAN AIR FORCE, F16, F-16, ABHINANDAN, KASHMIR, PAF, PAKISTAN AIR FORCE