ہوم   > بین الاقوامی

باربی کیو کرنے پر خاتون نے مقدمہ درج کروادیا

2 months ago

پڑوسیوں کے بڑے حقوق ہوتے ہیں لیکن ایسے پڑوسیوں کا کیا کیجئے جو معصومانہ اقدامات پر بھی اعلان جنگ کرتے ہوئے بات کورٹ کچہری تک لے جائیں۔

مغربی آسٹریلیا میں بھی کچھ ایسا ہی ہوا جہاں خاتون ہمسائیوں کی جانب سے باربی کیو کرنے پر انہیں روکنے کیلئے عدالت پہنچ گئیں۔

برطانوی نشریاتی ادارے میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق آسٹریلوی شہر پرتھ کی رہائشی سیلا کارڈن نامی خاتون کو شکایت ہے کہ ان کے پڑوسی بار بی کیو اورسگریٹ نوشی کرتے ہیں جبکہ ان کے بچے بہت زیادہ شور مچاتے ہیں جو کہ رہائشی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔

خاتون نے عدالت سے کہا کہ وہ یہ سب تکلیفیں برداشت کرتی ہیں، اس لیے پڑوسیوں کو روکنے کیلئے قانونی احکامات جاری کیے جائیں۔

عدالت نے خاتون کے اعتراضات کو نامناسب قراردیتے ہوئے مسترد کردیا کیونکہ صرف یہی نہیں خاتون نے اپنی درخواست میں یہ بھی لکھا تھا کہ پڑوسیوں کو گھر کی روشنی کم رکھنے، پالتو جانوروں کو خاموش رکھنے اور دونوں گھروں کے مشترکہ لان میں پودوں کی تبدیلی کے احکامات بھی دیے جائیں۔

خاتون کا موقف تھا کہ پڑوسیوں کے گھر سےسگریٹ اور بار بی کیو کی بو آتی ہے جبکہ میں سبزی خور ہوں ۔ بار بی کیو سے مجھے مچھلیوں کی بو آتی ہے اور میں اپنے گھر کے پچھواڑے نہیں جا سکتی۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ مذکورہ فیملی جو بھی کر رہی ہے اپنے گھر میں کر رہی ہے۔ یہ خاندان آپ (خاتون ) کو راضی کرنے کی کوشش میں پہلے ہی بار بی کیو کی جگہ منتقل کر چکا ہے۔ بچوں کا رات کے وقت باہر جانا بند کیا، اپنے صحن کو استعمال نہیں کیا اور انتقامی کارروائیوں کے خوف سے کئی ماہ تک باہر کی لائٹس بھی نہیں جلائیں ۔

آسٹریلین میڈیا کے مطابق سیلا کارڈن کا کہنا ہے کہ وہ مزید قانونی کارروائی کا ارادہ رکھتی ہیں۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں