ہوم   > بین الاقوامی

بھارت مسلمانوں کو دبانے کی پالیسی ترک کرے، ایرانی سپریم لیڈر

4 weeks ago

ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے کشمیر پر دو ٹوک مؤقف جاری کردیا، کہتے ہیں کہ بھارت خطے میں مسلمانوں کو دبانے کی پالیسی ترک کرے، برطانیہ نے جان بوجھ  کر مسئلہ کشمیر کو حل نہیں کیا۔

ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے اپنے ایک ٹویٹر پیغام میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر شدید تشویش کا اظہار کردیا، کہتے ہیں کہ ایران کے بھارت کے ساتھ  دوستانہ تعلقات ضرور ہیں مگر بھارتی حکومت خطے میں مسلمانوں کو دبانے کی پالیسی ترک کرے۔

ایرانی سپریم لیڈر نے بھارت پر زور دیا کہ وہ کشمیر میں انصاف پر مبنی پالیساں مرتب کرے۔

آیت اللہ خامنہ ای کہتے ہیں برطانیہ نے پاکستان اور بھارت کو کشمیر کے معاملے پر الجھائے رکھا اور جان بوجھ کر اس مسئلے کو بغیر حل کے رہنے دیا۔

بھارت نے یکطرفہ طور پر کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرکے اسے یونین کا حصہ بنالیا ہے، وادی میں 17 دن سے کرفیو نافذ ہے جبکہ انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں بھی جاری ہیں، موبائل فون، انٹرنیٹ اور ٹیلیویژن و ریڈیو کی نشریات بھی بند ہے، مقامی رہنماؤں اور غیر ملکی میڈیا کو بھی مقبوضہ کشمیر جانے کی اجازت نہیں دی جارہی۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں