ناروے کی مسجد میں دہشت گرد کو دبوچنے والا پاکستانی شہری نکلا

August 12, 2019

ناروے کے دارالحکومت اوسلو کی ایک مسجد میں سفید فام دہشت گرد کو فائرنگ کرنے سے قبل دبوچ کر درجنوں نمازیوں کی جان بچانے والا شخص پاکستانی نکلا۔  65 سالہ محمد رفیق پاکستان ایئر فورس کے ریٹائرڈ اہلکار ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق عید الاضحیٰ سے ایک روز قبل اوسلو کی ایک مسجد میں شدت پسند مسلح سفید فام حملہ آور نے گھس کر فائرنگ کرنے کی کوشش کی مگر مسجد میں موجود ایک پاکستانی بزرگ نمازی نے اسے پکڑ لیا اور پولیس کے آنے تک قابو میں رکھا۔ حملہ کے وقت مقامی مسلمان مسجد میں عید کے اجتماع کی تیاریوں میں مصروف تھے۔

یہ بھی پڑھیں: ناروے، مسجد میں فائرنگ سے ایک شخص زخمی، حملہ آور گرفتار

تفتیشی حکام نے کا کہنا ہے کہ دہشت گرد کو دچنے والا بزرگ شخص پاکستانی ہے اور وہ پاکستان فضائیہ کے ریٹائرڈ ملازم ہیں۔

حکام نے بہادری اور جواں مردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ناروے کو ایک بڑے سانحہ سے بچانے پر محمد رفیق کا شکریہ ادا کیا ہے۔

واقعہ کے بعد تفتیشی حکام نے 20 سالہ حملہ آور کے گھر کی تلاشی لی تو وہاں سے اس کی سوتیلی بہن کی لاش بھی ملی ہے جس پر پولیس نے ملزم کیخلاف بہن کے قتل اور مسجد پر حملے کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔

تفتیشی حکام نے مزید بتایا کہ ملزم ناروے کا ہی شہری ہے جو کہ وائٹ سپرمیسی کا حامی اور نازی ازم سے متاثر ہے۔