ہوم   > بین الاقوامی

بھارتی ایڈیٹرز کا کشمیر کی صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار

SAMAA | - Posted: Aug 10, 2019 | Last Updated: 8 months ago
SAMAA |
Posted: Aug 10, 2019 | Last Updated: 8 months ago

بھارتی اخبارات کے مدیروں کی نمائندہ تنظیم ’ایڈیٹرز گلڈ انڈیا‘ نے کشمیر کے مواصلاتی اور کمیونیکیشن نظام کی بندش پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے میڈیا کی آزادی کی راہ میں رکاوٹ قرار دیا ہے۔

ایڈیٹرز گلڈ کا بیان ایسے وقت میں آیا ہے جب بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد ممکنہ ردعمل سے بچنے کیلئے پوری وادی کشمیر کو جیل میں تبدیل کردیا ہے۔ وادی میں کرفیو نافذ ہے۔ موبائل سروس، لینڈ لائن ٹیلی فون، براڈ بینڈ انٹرنیٹ سمیت کمیونیکشن کے تمام ذرائع مکمل طور پر بند ہیں جس کے باعث صحافیوں کو پیشہ ورانہ امور کی انجام دہی اور کشمیر کی تازہ ترین صورتحال دنیا کے سامنے لانے میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

ایڈیٹرز گلڈ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت سے کشمیر جانے والے صحافی تو واپسی پر اپنی خبریں شائع کرسکتے ہیں مگر مقامی کشمیری میڈیا کیلئے یہ صورتحال ’انتہائی ظالمانہ اور سفاکانہ‘ یے کیوں کہ مقامی میڈیا ہی واحد ذریعہ ہے جس تمام تر واقعات کو اپنی آنکھوں سے دیکھتا اور سنتا ہے۔

بیان کے مطابق بھارتی حکومت کو اچھی طرح معلوم ہے کہ انٹرنیٹ کے بغیر خبریں پہنچانا اور شائع کروانا ممکن نہیں۔ اس لئے بھارت سمیت مقبوضہ جموں و کشمیر میں رہنے والوں کا یہ حق ہے کہ ان کو میڈیا تک رسائی دی جائے اور میڈیا کو بھی آزادانہ اپنی ذمہ داریاں نبھانے میں مشکلات پیش نہ آئیں۔

ایڈیٹرز گلڈ نے مزید کہا ہے کہ انتظامیہ صحافیوں کو کرفیو پاس جاری کرنے میں بھی امتازی سلوک برت رہی ہے۔ معلومات تک رسائی، کرفیو پاسز اور کمیونکیشن کے ذرائع کشمیری سمیت دیگر علاقوں سے آںے والے صحافیوں کا حق ہے۔ تمام شہری اور سارے صحافی یکساں سلوک کے حقدار ہیں۔

واضح رہے کہ بھارتی حکومت کی جانب سے صرف من پسند صحافیوں کو کرفیو پاسز جاری کیے جانے کی اطلاعات آرہی ہیں جبکہ آزادانہ رپورٹنگ کرنے والے صحافیوں کو وادی میں جانے سے روکا جارہا ہے اور مقامی صحافیوں کو بھی پاسز اور کمیونکیشن سسٹم تک رسائی نہیں دی جارہی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube