Thursday, October 22, 2020  | 4 Rabiulawal, 1442
ہوم   > بین الاقوامی

سعودی عرب میں 37 دہشت گردوں کے سر قلم

SAMAA | - Posted: Apr 24, 2019 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: Apr 24, 2019 | Last Updated: 1 year ago

سعودی عرب میں دہشت گردی کے جرم میں سزا پانیوالے 37 شہریوں کو سزائے موت دیدی گئی، تمام افراد کے سر عام سر قلم کئے گئے۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق سعودی عرب میں 3 برس بعد ایک بار پھر اجتماعی طور پر سر قلم کئے گئے، اس سے پہلے سزائے موت پر اجتماعی عملدرآمد پر سعودی عرب اور ایران کے درمیان سفارتی تعلقات معطل ہوگئے تھے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ دہشت گردوں کے سر عام سر قلم کرنے کے فیصلوں پر سعودی دارالحکومت ریاض، مکہ، مدینہ، سنی صوبے قاسم اور شیعہ اقلیت والے مشرقی صوبے میں عملدرآمد کیا گیا ہے۔

سعودی عرب کے سرکاری خبر رساں ادارے نے بتایا کہ سزائے موت پانے والوں میں دہشت گردی اور انتہاء پسندی کے خیالات اپنانے سمیت ملکی سلامتی کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کیلئے دہشت گرد سیل بنانے میں ملوث لوگ شامل ہیں۔

سعودی عرب میں سال رواں کے آغاز سے اب تک 100 افراد کی سزائے موت پر عملدرآمد کیا جاچکا ہے اور اس کیلئے عام طور پر سر قلم کیا جاتا ہے۔

ملک میں دہشت گردی، قتل، آبرو ریزی، مسلح ڈاکے اور منشیات کی اسمگلنگ کے مجرموں کو سزائے موت دی جاتی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube