کابل میں وزارت اطلاعات کی عمارت کے قریب دھماکا اور فائرنگ، 6 افراد زخمی

April 20, 2019

 

افغان دارالحکومت کابل میں سرکاری عمارت پر حملے میں 6 افراد زخمی ہوگئے، ایک حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑالیا، فورسز نے دیگر ملزمان کو ہلاک کردیا، 2 ہزار افراد کو بحفاظت عمارت سے نکال لیا گیا۔

افغان وزارت داخلہ کے ترجمان نصرت رحیمی کے مطابق کابل کے سیرینا ہوٹل کے قریب زوردار دھماکا ہوا، جس کے بعد وزارت اطلاعات کے دفاتر کے آس پاس بھی فائرنگ شروع ہوگئی۔

سیرینا ہوٹل میں غیر ملکیوں کی بڑی تعداد ٹھہری ہوئی ہے، ابھی تک حملے کی ذمہ داری کسی نے قبول نہیں کی، اطلاعات کے مطابق طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرنے سے انکار کیا۔

میڈیا کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے سرکاری دفاتر میں داخل ہونے کی کوشش کی، حملے میں تاحال 6 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں، فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے رکھا ہے۔

سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ وزارت اطلاعات کی عمارت سے 2 ہزار افراد کو ریسکیو کرلیا گیا، جبکہ تمام حملہ آوروں کو بھی ہلاک کردیا گیا۔

وزارت اطلاعات کے ایک ملازم کا کہنا ہے کہ اس نے 3 مسلح افراد کو عمارت میں داخل ہوتے دیکھا، جن میں سے ایک نے دھماکا کیا جبکہ دیگر 2 حملہ آوروں اور فورسز کے درمیان جھڑپ ہوئی۔

وزارت داخلہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ واقعے کے بعد شہر کا مرکزی اور مصروف ترین علاقہ سیل کردیا گیا تھا۔