Saturday, October 31, 2020  | 13 Rabiulawal, 1442
ہوم   > Latest

مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کرنیوالی نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کو قتل کی دھمکیاں

SAMAA | - Posted: Mar 22, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Mar 22, 2019 | Last Updated: 2 years ago

کرائسٹ چرچ میں مساجد پر دہشت گردی کے بعد مسلمانوں سے اظہار یکجہتی اور مثالی کردار ادا کرنیوالی نيوزی لينڈ کی وزيراعظم جیسنڈا کو قتل کی دھمکياں ملنے لگيں۔ نیوزی لینڈ میں گزشتہ ہفتے نماز جمعہ کے موقع پر آسٹریلوی دہشت گرد نے کرائسٹ چرچ کی دو مساجد میں گھس کر فائرنگ کی، ہولناک واقعے...

کرائسٹ چرچ میں مساجد پر دہشت گردی کے بعد مسلمانوں سے اظہار یکجہتی اور مثالی کردار ادا کرنیوالی نيوزی لينڈ کی وزيراعظم جیسنڈا کو قتل کی دھمکياں ملنے لگيں۔

نیوزی لینڈ میں گزشتہ ہفتے نماز جمعہ کے موقع پر آسٹریلوی دہشت گرد نے کرائسٹ چرچ کی دو مساجد میں گھس کر فائرنگ کی، ہولناک واقعے میں 9 پاکستانیوں سمیت مختلف ممالک کے 50 افراد شہید اور درجنوں زخمی ہوگئے تھے۔

دہشت گردی کے اس واقعے کیخلاف جہاں دنیا بھر سے آوازیں اٹھیں وہیں نيوزی لينڈ کی وزيراعظم جیسنڈا آرڈرن کا مثالی کردار بھی سامنے آیا جس نے دنيا بھر کے مسلمانوں کے دل جيت لئے۔

کرائسٹ چرچ حملے کے بعد آج پہلا جمعۃ المبارک تھا، اس موقع پر جہاں ہزاروں مسلمان نماز کی ادائیگی کیلئے مسجد پہنچے وہیں وزیراعظم جیسنڈا اور ہزاروں غیر مسلم بھی اظہار یکجہتی کیلئے وہاں موجود تھے۔

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے شہداء کو خراج عقيدت پيش کرتے ہوئے کہا کہ آج سارا نيوزی لينڈ غمزدہ ہے، انہوں نے اپنی تقریر میں حديث نبوی ﷺ بھی پڑھ کر سنائی۔

وزيراعظم جیسنڈا کا مسلمانوں سے اظہار یکجہتی اور امن کا يہ انداز انتہاء پسندوں سے برداشت نہيں ہوا اور انہيں ٹوئٹر پر قتل کی دھمکیاں دی جانے لگیں۔

رپورٹس کے مطابق جیسنڈا کیلئے گن کی تصوير کے ساتھ کيپشن لکھا گیا کہ اگلی باری تمہاری ہے، انتہاء پسندی کیلئے استعمال ہونیوالے اکاؤنٹ کو فوری طور پر بلاک کرديا گيا، مقامی پولیس نے دھمکی دينے والے کی تلاش اور تحققيقات شروع کردی ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube