Thursday, October 22, 2020  | 4 Rabiulawal, 1442
ہوم   > Latest

پلوامہ خودکش حملہ، ہلاک بھارتی اہلکاروں کی تعداد 44 ہوگئی

SAMAA | - Posted: Feb 15, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Feb 15, 2019 | Last Updated: 2 years ago

مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلواما میں بھارتی اہلکاروں کی بس پر خودکش کار بم حملے میں ہلاک فوجیوں کی تعداد 44 تک پہنچ گئی ہے۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق خودکش حملے میں متعدد فوجی زخمی بھی ہوئے، جن کی حالت تشویش ناک ہے۔ واضح رہے کہ بارودی مواد سے بھری گاڑی نے بھارتی فوجی قافلے میں شامل ایک بس کو نشانہ بنایا۔ قافلے میں 70 گاڑیاں، جب کہ 2500 اہل کار شامل تھے۔

حملے کے بعد ضلع پلواما کی 300 کلو میٹر لمبی سری نگر جموں ہائی وے بند، جب کہ وادی میں سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی۔ یہی وہ شاہراہ ہے جو ہر سال ہندو یاتری امرناتھ گھپا تک جانے کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ بھارتی حکام کے مطابق خود کش حملے میں 350 کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا، حملے میں ایک بس اور 5 گاڑیاں مکمل طور پر تباہ ہوئیں۔

پیرا ملٹری سینٹرل ریزرو پولیس فورس کے ترجمان سنجے شرما نے بتایا کہ متعدد زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے۔ بھارتی حکام کے مطابق ایک خودکش حملہ آور نے لیتہ پورہ کے قریب جموں سری نگر شاہراہ پر نیم فوجی فورس سی آر پی ایف کے ایک قافلے کو نشانہ بنایا۔ مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے پہلے بسوں پر فائرنگ کی اور بعد میں دھماکہ خیز مواد سے بھری ہوئی ایک گاڑی قافلے سے ٹکرا گئی۔

بھارتی حکام کا مزید کہنا تھا کہ بس میں سوار تمام اہل کار گھروں پر چھٹیاں گزارنے کے بعد واپس ڈیوٹی پر جا رہے تھے۔ ہلاک اور زخمی اہل کاروں کو ایک ہفتہ قبل ڈیوٹی پر تعینات کیا جاتا تھا، تاہم کچھ ناگزیر وجوہات کی بنا پر یہ تعیناتی تعطل کا شکار رہی۔

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ سال 2016 میں آرمی کیمپ پر حملے کے بعد یہ سب سے بڑا حملہ قرار دیا جا رہا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube