ہوم   > Latest

کیلی فورنیا آتشزدگی،29 افراد ہلاک،متعدد فائر فائٹر بھی زخمی

1 year ago

امریکی ریاست کیلی فورنیا کے جنگلات میں لگی آگ سے ہلاک افراد کی تعداد 29 تک پہنچ گئی ہے، جب کہ ہنگامی حالات کے نفاذ کے بعد اب تک درجنوں افراد لاپتا ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق مقامی شیرف کورے ہونیا کا کہنا ہے کہ 6 افراد کی لاشوں کے باقیات ملنے کے بعد ہلاک افراد کی تعداد 29 تک پہنچ چکی ہے۔

 

امریکی حکام کے مطابق جنگلات میں لگی آگ تاریخ کی بدترین آگ قرار دی گئی ہے۔ فائر فائٹر اور امدادی کارکنوں کی جانب سے متاثرہ علاقے میں سرچنگ کا عمل بھی جاری ہے، جب کہ زمینی آپریشن کے ساتھ ساتھ فضائی آپریشن بھی آگ سے متاثرہ علاقے میں جاری ہے۔

فائر ڈیپارٹمنٹ کے مطابق تیز ہواوں کے باعث امدادی کاموں اور آگ بجھانے میں مشکلات کا سامنا ہے، وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ جنگلات کی آگ مزید قیامت اور تباہی مچا رہی ہے۔

آتشزدگی کے باعث اب تک ڈھائی لاکھ افراد علاقے سے نقل مکانی کرچکے ہیں۔ پیراڈائز کے متاثرہ علاقے میں آگ نے 6 ہزار چار سو ایکڑ کی زمین کو راکھ کے ڈھیر میں تبدیل کردیا ہے۔

متاثرہ علاقے سے باہر حکام کی جانب سے بڑی تعداد میں موبائل گھر قائم کردیئے گئے ہیں، پولیس کی جانب سے لوگوں کو متاثر اور خطرناک جہگوں سے دور رکھنے کیلئے پیلے ٹیپ لگا کر مقامات کی نشاندہی کی گئی ہے۔ ترجمان میئر کے مطابق اب تک امدادی آپریشن میں حصہ لینے والے 4 ہزار فائر فائٹرز حصہ لے رہے ہیں۔

آگ پر قابو پانے سے متعلق حکام کا کہنا ہے کہ علاقے میں مکمل طور پر آگ پر قانو پانے میں 3 سے 4 ہفتے لگ سکتے ہیں۔ معروف اداکار ول اسمتھ نے ایک وڈیومیں کہا ہے کہ ان کا گھر بھی ڈینجر زون میں ہے۔

کیلیفورنیا میں تین مختلف مقامات پر 3 روز سے لگی آگ کے باعث لاکھوں افراد علاقے سے نقل مکانی کرچکے ہیں، کئی اسکولز اوراسپتال بھی آگ کی لپیٹ میں آگئے۔

آگ کا دھواں اتنا شدید اور گہرا ہے کہ بلند فضاوں میں اڑنے والے طیاروں سے بھی اسے واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں