ہوم   > Latest

امریکی ریاست کیلی فورنیامیں تاریخ کی بدترین آگ مزید بےقابو،ہلاکتیں25 ہوگئیں

1 year ago

امریکی ریاست کیلی فورنیا کی تاریخ میں  بدترین آگ مزید بے قابو ہوگئی۔ مختلف حادثات میں ہلاک افراد کی تعداد اب 25 تک پہنچ گئی ہے۔ فائر فائٹر حکام کے مطابق آگ بجھانے میں مزید 3 سے 4 ہفتے لگ سکتے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کی جانب سے جاری اطلاعات کے مطابق دن گزرنے کے ساتھ ساتھ کیلی فورنیا میں جنگلات کی آگ  مزید قیامت اور تباہی مچا رہی ہے۔

 

متاثرہ علاقے سے انخلا کے دوران آگ کی لپیٹ میں آکر ہلاک افراد کی تعداد 25 تک پہنچ گئی ہے، جب کہ 6 ہزار سے زائد مکانات جل کر راکھ کا ڈھیر بن چکے ہیں۔

آگ کی زد میں آکر ہالی ووڈ ستاروں کے محل نما گھر بھی لپیٹ میں آگئے، جب کہ مزید گھر بھی متاثر ہونے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔ لیڈی گاگا،وِل اسمتھ اور کمِ کارڈیشن سمیت ڈیڑھ لاکھ افراد سے گھر خالی کرالیے گئے۔ معروف اداکار ول اسمتھ نے ایک وڈیومیں کہا ہے کہ ان کا گھر بھی ڈینجر زون میں ہے۔

کیلیفورنیا میں تین مختلف مقامات پر 3 روز سے لگی آگ کے باعث لاکھوں افراد علاقے سے نقل مکانی کرچکے ہیں، کئی اسکولز اوراسپتال بھی آگ کی لپیٹ میں آگئے۔

پولیس حکام کے مطابق جنگل میں لگی آگ تیزی سے آبادی کی جانب بڑھ رہی ہے۔ قصبے پیراڈائز سے 26ہزار افراد کو ہنگامی بنیادوں پر نقل مکانی کرنا پڑی۔ یہ قصبہ جل کر راک کا ڈھیر بن گیا ہے۔ اسی علاقے سے محفوظ مقام پر جانے والے 5 افراد گاڑی میں آگ کی لپیٹ میں آکر لقمہ اجل بن گئے، جب کہ ہنگامی صورت حال کے دوران اب تک کئی افراد لاپتا ہے۔

فائر فائٹر حکام کا کہنا ہے کہ آگ بجھانے کیلئے ہیلی کاپٹرز کے ساتھ ساتھ زمینی آپریشن بھی جاری ہے۔

متاثرہ علاقے کے شیرف کا کہنا ہے کہ آگ نے ایک لاکھ 75 ہزار ایکڑ رقبے کو لپیٹ میں لے رکھا ہے۔ آگ کا دھواں اتنا شدید اور گہرا ہے کہ بلند فضاوں میں اڑنے والے طیاروں سے بھی اسے واضح طور پر دیکھا جا سکتا ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں
 
 
 
 
 
 
 
 
مقبول خبریں