ترکی نے امریکی مصنوعات پر ٹیکس دوگنا، الیکٹرانکس کا بائیکاٹ کردیا

Noor Ul Huda Shaheen
August 15, 2018

امریکا کی جانب سے ترکی پر معاشی پابندیوں کے بعد ترک صدر رجب طیب اردگان نے امریکی الیکٹرانک مصنوعات کے بائیکاٹ کا اعلان کیا ہے جبکہ دیگر مصنوعات کی درآمد پر کسٹم ڈیوٹی کی شروع دوگنی کی جائے گی۔

امریکی ساختہ مصنوعات کی درآمد پر اضافی کسٹم ڈیوٹی کا صدارتی فیصلہ سرکاری گزٹ میں شائع ہو گیا ہے جس پر صدر رجب طیب اردگان کے دستخط بھی ہیں۔

فیصلے کی رُو سے چاول، الکحل والے مشروبات، تمباکو کے پتّوں، پرائیویٹ گاڑیوں اور کاسمیٹکس سمیت امریکی ساختہ مصنوعات  کی درآمد پر عائد اضافی کسٹم ڈیوٹی کو دوگنا کر دیا گیا ہے۔

صدارتی فیصلے کے بعد نائب صدر فواد اوکتائے نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ فیصلہ ترکی کی اقتصادیات پر شعوری حملوں کا جواب ہے۔

اس سے قبل  انقرہ کے چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر رجب طیب اردگان  نے کہا کہ ترک عوام امریکی الیکٹرانکس مصنوعات کا مکمل بائیکاٹ کریں گے۔

امریکا کی پابندیوں سے متعلق اردگان نے کہا کہ یہ ترکی کے خلاف کھلم کھلا اقتصادی جنگ ہے، اس کے خلاف تمام تر تدابیر اختیار  کر رہے ہیں۔ روزگار  کے مواقع اور سیاحت کے حوالے سے ہم ایک ریکارڈ دور سے گزر رہے ہیں۔ آج ہمارا ملک ہر اعتبار سے دنیا کے مضبوط ترین بینکاری نظام کا مالک ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکا نے  کئی ایک ممالک کے خلاف اقتصادی جنگ چھیڑ رکھی ہے۔ ہمارے ملک کے  خلاف یہ آپریشن کہیں زیادہ بڑا ہے۔

اردگان نے ترک سرمایہ داروں پر زور دیا کہ غیر ملکی کرنسی کو ترک لیرے میں تبدیل کی جائے۔ ترک لیرے کے وقار کا تحفظ کرنا ان سازشوں کے خلاف بہترین جواب ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم امریکی ساخت کی الیکڑونک مصنوعات کا بائیکاٹ کریں گے۔ اس ہفتے مغربی ممالک اور عالمی سطح پرہماری کئی ملاقاتیں اور مذاکرات طے شدہ ہیں۔ بعض دوست ممالک نے ہمارے ساتھ اس حوالے سے بھر پور تعاون کا اعادہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکا نے عالمی تجارتی تنظیم کے اصولوں  کو نظر انداز کرتے ہوئے ترکی سے خریدی جانے والی اسٹیل اور ایلومینیم پر کسٹم ڈیوٹی کو دوگنا کر دیا تھا۔