بھارت کے یوم آزادی پر مقبوضہ وادی میں یوم سیاہ

August 15, 2018

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے یوم آزادی پر یوم سیاہ منایا جارہا ہے۔ حریت رہنماؤں کی اپیل پر آج وادی میں مکمل ہڑتال کی گئی ہے۔

مقبوضہ وادی میں کشمیریوں نے پاکستان کا یوم آزادی بھرپور جوش و جذبے سے منایا گیا، تاہم حریت رہنماؤں کی اپیل پر وادی میں بھارت کے یوم آزادی کو یوم سیاہ کے طور پرمنائے جانے کا اعلان کیا گیا ہے۔

سری نگر، کپواڑہ، بارہ مولا، پلوامہ اور اسلام آباد میں مکمل پہیہ جام ہے۔ بازار، دکانیں، اسکولز کالجز اور دفاتر بند ہیں۔ ہڑتال کی کال حریت رہنماؤں سید علی گیلانی، میرواعظ عمرفاروق اور یاسین ملک کی جانب سے دی گئی ہے۔ اس موقع پر قابض فوج نے وادی میں بڑی تعداد میں سیکیورٹی فورسز کی تعینات کر رکھی ہے۔ وادی میں ہڑتال کی کال پر کرفیو کا سماں ہے۔

 

دوسری جانب 14 اگست پر پاکستان کے یوم آزادی پر مقبوضہ وادی میں بارمولا اور دیگر مقامات پر پاکستان کے حق میں نعرے لگائے گئے اور قومی ترانا پڑھا گیا۔ نوجوانوں، بچوں اور بوڑھوں نے بڑی تعداد میں سڑکوں پر نکل کر پاکستان کے حق میں نعرے لگائے، جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئیں۔