Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

پیرو میں ججز پر رشوت لے کر فیصلے دینے کا الزام

SAMAA | - Posted: Jul 20, 2018 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Jul 20, 2018 | Last Updated: 3 years ago

پرو میں مقامی میڈیا نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ججز رشوت لے کر فیصلے کرتے ہیں، الزامات سامنے آنے پر پیرو کے سپریم کورٹ کے سربراہ نے اپنا استعفیٰ پیش کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق جنوبی امریکا کے ملک پرو میں عدلیہ کا اسکینڈل سامنے آیا ہے جس میں ایسی آڈیو ٹیپس منظر عام پر لائیں گئی ہیں جن سے کچھ ججوں کی طرف سے رشوت لے کر فیصلے دینے کا انکشاف ہوا ہے۔

ڈیو ٹیپس میں ان ججوں کو مالی پیش کشوں کے بدلے میں فیصلے دینے کا ارادہ کرتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔ پرو کی جوڈیشل برانچ نے یہ اسکینڈل سامنے آنے کے بعد ملکی عدلیہ میں تین ماہ کی ایمرجینسی نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

جوڈیشل برانچ کے صدر نے کہا ہے کہ یہ انکشاف سسٹم کی مکمل ناکامی ظاہر کرتا ہے، ایک ٹیپ میں ایک جج نے اپنے مطلب کی سزا کے بدلے میں پیسوں کا وعدہ کیا، جب کہ ایک اور ٹیپ میں ایک جج کو ایسی کال سنتے ہوئے سنا جا سکتا ہے جس میں ان سے کہا جا رہا ہے کہ وہ گیارہ سالہ لڑکی کے ریپ میں ملوث شخص کی سزا کم کر دیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube