فلوریڈا اسکول فائرنگ، ایف بی آئی نے غلطی کا اعتراف کرلیا

Samaa Web Desk
February 17, 2018

فلوریڈا / واشنگٹن : امریکی تحقیقاتی ادارے ایف بی آئی نے فلوریڈا فائرنگ کے واقعہ پر اپنی سستی اور غلط کا اعتراف کرلیا، ایف بی آئی حکام کا کہنا تھا کہ فائرنگ میں ملوث ملزم کے بارے میں ایک ماہ قبل معلومات ملی تھی، تاہم بروقت کام نہ اقدامات نہ کرسکے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی جانب سے جاری رپورٹس کے مطابق امریکی ایف بی آئی نے اعتراف کیا ہے کہ اسے فلوریڈا فائرنگ میں ملوث ملزم کے بارے میں ایک ماہ قبل معلومات ملی تھیں مگر وہ بروقت اقدام اٹھانے میں ناکام رہے۔

اطلاعات سامنے آنے پر گورنر فلوریڈا نے ایف بی آئی ڈائریکٹر کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ہے، گورنر نے کہا ہے کہ جب ملزم کے ارادوں کا پتا تھا تو پکڑا کیوں نہیں گیا؟

ایف بی آئی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ فلوریڈا اسکول فائرنگ سے ایک ماہ قبل ادارے کو کسی نے اطلاع دی تھی کہ ملزم نکولس کروز شاید اس طرح کی کوئی منصوبہ بندی کررہا ہے اور اس حوالے سے تشویش کا اظہار بھی کیا گیا تھا۔

ایف بی آئی کے مطابق اطلاع دینے والے شخص نے نکولس کے پاس موجود اسلحے کی تفصیلات، لوگوں کو مارنے کی اس کی خواہش ، اس کے مشکوک رویے اور سوشل میڈیا پر اس کی پریشان کن پوسٹس کے بارے میں آگاہ کیا تھا، اس کے علاوہ اسکول میں فائرنگ کیے جانے کے امکان کے بارے میں بھی ایک ماہ قبل ایف بی آئی کو آگاہ کردیا گیا تھا۔

ایف بی آئی اے کے مطابق فراہم کردہ اس معلومات کو درست طور پر استعمال نہیں کیا گیا اور نہ ہی اس حوالے سے کوئی اقدام اٹھایا گیا اور مزید تفتیش نہیں کی گئی۔

واضح رہے کہ فلوریڈا کے شہر پارک لینڈ میں بدھ کے روز نکولس کروز نے ہائی اسکول میں داخل ہو کر فائرنگ کی تھی، جس کے نتیجے میں سترہ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے تھے۔ سماء