سعودیہ عرب،بدعنوانی کے الزام میں 208 افراد زیر حراست

November 10, 2017

ریاض :  سعودی حکام نے بدعنوانی کے الزام میں 208 افراد کو حراست میں لینے کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ حراست میں لیے گئے افراد میں سے 201 افراد پر100 ارب ڈالرز کی بدعنوانی کا الزام ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق  سعودی حکام نے بدعنوانی کے الزام میں 208 افراد کو حراست میں لینے کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ حراست میں لیے گئے افراد میں سے 201 افراد پر100 ارب ڈالرز کی بدعنوانی کا الزام ہے۔

سعودی اٹارنی جنرل سعودی المعجب کے مطابق انسداد بدعنوانی کے الزامات کے تحت ابھی تک 208 افراد سے تفتیش کی گئی ، جن میں سے 7 افراد کو ثبوتوں کی عدم دستیابی کے باعث رہا کردیا گیا ہے۔

المعجب نے مزید کہا کہ ابتدائی تفتیش سے اندازہ ہوا کہ زیر حراست افراد نے منظم کرپشن کے ذریعے 100 ارب ڈالرز کا غلط استعمال کیا تاہم انہوں نے مفاد عامہ کی خاطر کسی کا نام لینے سے گریز کیا۔ اٹارنی جنرل نے یقین دہانی کی کہ بدعنوانی کے خلاف تحقیقات سے تجارتی سرگرمیاں متاثر نہیں ہوئی اور صرف ذاتی کھاتوں کو منجمد کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں انسداد بدعنوانی مہم کے تحت 11 شہزادوں، متعدد وزراء سمیت سرکاری اور کاروباری شخصیات، میڈیا ہاؤسز کے مالکان کو حراست میں لیا گیا ہے۔ سماء

Email This Post
 
 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.