عالمی عدالت انصاف کے فیصلے پر امریکی ہٹ دھرمی

May 18, 2017

کراچی : عالمی عدالت انصاف کا احترام اپنی جگہ لیکن اس عدالت کے فیصلوں پر امریکا نے کبھی کان نہیں دھرے کئی مثالیں موجود ہیں۔

عالمی عدالت کچھ کہتی ہے کہتی رہے فیصلہ خلاف آتا ہے آتا رہے، امریکا نے اپنا سپر پاور ہونے کا بھرم کبھی نہیں توڑا، میکسیکو ہو جرمنی یا پھر پیراگوئے امریکا کے خلاف درجنوں کیسز عالمی عدالت میں چلے لیکن اس نے کبھی کان نہ دھرے۔

انیس سو بانوے میں پیراگوئے کے باشندے کو زیادتی اور قتل کاالزام میں ورجینیا کی عدالت نے سزائے موت سنائی پیراگوئے نے قونصلر رسائی کا مدعا اٹھایا، تین اپریل انیس سو اٹھانوے کو آئی سی جے میں مقدمہ شروع ہوا، اسٹے آرڈر ملا لیکن امریکا نے سزا برقرار رکھی اور چودہ اپریل کو ہی زہریلا انجکشن لگادیا۔

جرمنی کے دو بھائیوں کارل اور والٹر لا گرانڈ نے ایری زونا میں بینک ڈکیتی کے دوران ایک شخص کو موت کے گھاٹ اتارا تو امریکی عدالت نے سزائے موت سنائی معاملہ عالمی عدالت میں دو مارچ انیس سو ننانوے کو پہنچا لیکن امریکانے تین مارچ کو ہی والٹر لاگرینڈ کو زہریلی گیس سونگھا کر معاملہ ختم کردیا۔

میکسیکو اور امریکا کے ایوینا کیس نے بھی خوب شہرت حاصل کی عالمی عدالت میں قونصلر رسائی کامعاملہ آیا لیکن یہاں بھی امریکی ہٹ دھرمی برقرار رہی۔ سماء

Email This Post
 

:ٹیگز


 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.