بھارتی سپریم کورٹ نے تاریخی بابری مسجد کیس کا فیصلہ سنا دیا

Samaa Web Desk
April 19, 2017

2014_04_04_06_59_57_babri5

نئی دہلی :  بابری مسجد انہدم کیس میں بھارتی سپریم کورٹ نے لال کرشن ایڈوانی، مرلی منوہر جوشی، سمیت مختلف رہنماؤں کے خلاف مقدمہ چلانے کا حکم  دے دیا۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق بھارتی سپریم کورٹ نے ایودھیا میں بابری مسجد انہدم کیس میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سینیر لیڈر لال کرشن ایڈوانی، مرلی منوہر جوشی، اوما بھارتی سمیت مختلف رہنماؤں کے خلاف مجرمانہ سازش رچانے کا مقدمہ چلانے کا حکم دیا ہے۔

بدھ کو بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق بھارت کی سپریم کورٹ کے جسٹس پناکی چندر گھوش اور جسٹس روھگٹن ایف نریمان کی بینچ نے بدھ کو سماعت کے دوران اس معاملے میں مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کی اپیل قبول کرتے ہوئے مجرمانہ سازش سے متعلق مقدمہ چلانے کا حکم دیا۔

Babri-Masjid-demolition-3

کورٹ نے گورنر کے عہدے پر ہونے کی وجہ سے کلیان سنگھ کے خلاف فی الحال الزام طے نہ کرنے کا حکم بھی دیا ہے۔ سماء