Wednesday, January 26, 2022  | 22 Jamadilakhir, 1443

فیس بک نے معافی مانگ لی

SAMAA | - Posted: Sep 26, 2016 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Sep 26, 2016 | Last Updated: 5 years ago

3

اسلام آباد : فیس بک نے فلسطینی اخبارات کے مدیران اور ایڈیٹرز کے ذاتی اکاؤنٹس غیر فعال کرنے پر معافی مانگ لی، فلسطینیوں کے اکاؤنٹس تشدد پر اکسانے کے الزامات کے تحت معطل کئے گئے تھے۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق الیکٹرانک انتفادہ کا کہنا ہے کہ فیس بک نے 2 فلسطینی نیوز پبلیکیشنز کے مدیران اور کئی ایڈیٹرز کے ذاتی اکاؤنٹس کو تشدد پر اکسانے کے الزامات لگا کر غیر فعال کردیا گیا، فیس بک حکام نے فلسطینیوں کے اکاؤنٹس کو غیر فعال کرنے پر معافی مانگتے ہوئے کہا ہے کہ یہ تمام اکاؤنٹس غلطی سے معطل کئے گئے، ان اکاؤنٹس سے متعلق شکایت کی گئی تھی کہ ان سے ویب سائٹ کی قواعد و ضوابط کی کلاف ورزی کی جارہی ہے۔

فیس بک کی جانب سے غیر منصفانہ فیصلے کا نشانہ بننے والے فلطسینی خبر رساں اداروں کا کہنا ہے کہ یہ اقدام اسرائیل کی ایماء پر کیا گیا۔

الجزیرہ کے مطابق شہاب نیوز ایجنسی کے 4 ایڈیٹرز اور قدس نیوز نیٹ ورک کے 3 مدیران کے ذاتی فیس بک اکاؤنٹس جمعہ کے روز غیر فعال کئے گئے، دونوں ادارے مقبوضہ فلسطین سے متعلق خبریں نشر کرتے ہیں، شہاب اور قدس کے فیس بک پیجز پسند کرنیوالوں کی تعداد بالترتیب63 لاکھ اور 51 لاکھ ہے۔

قدس کے افسر نے الیکٹرانک انتفادہ کو بتایا کہ اکاؤنٹس معطل کرنے کا اقدام اسرائیل اور فیس بک کے درمیان معاہدے کا نتیجہ ہے۔ اسرائیلی وزراء نے فیس بک کو بھیانک دیو قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ فیس بک، ٹویٹر اور دیگر ویب سائٹس تشدد پر اکسانے سے متعلق مواد اپنی وائٹس سے ہٹائیں۔

فلسطینی شہریوں نے اسرائیل کی جانب سے سوشل میڈیا کیخلاف کریک ڈاؤن پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سڑکوں پر پیش آنے والے واقعات آن لائن پیغامات کا نہیں بلکہ 50 سالہ فوجی قبضے کا نتیجہ ہیں۔ سماء

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube