Saturday, April 10, 2021  | 26 Shaaban, 1442

ترکی روس کشیدگی برقرار، امریکا پر سازش کا الزام

SAMAA | - Posted: Nov 27, 2015 | Last Updated: 5 years ago
SAMAA |
Posted: Nov 27, 2015 | Last Updated: 5 years ago

انقرہ / ماسکو : جيٹ طيارے کے معاملے پر ترکی اور روس ميں کشيدگی برقرار ہے، روس نے امريکا پر سازش کا الزام عائد کيا ہے  جبکہ ترک صدر نے روسی الزامات کی ترديد کردی۔ شام ميں جاری فضائی آپريشن کے دوران روس کے جنگی طياروں کی نقل و حرکت سے امريکا کو آگاہ کيا...

انقرہ / ماسکو : جيٹ طيارے کے معاملے پر ترکی اور روس ميں کشيدگی برقرار ہے، روس نے امريکا پر سازش کا الزام عائد کيا ہے  جبکہ ترک صدر نے روسی الزامات کی ترديد کردی۔

شام ميں جاری فضائی آپريشن کے دوران روس کے جنگی طياروں کی نقل و حرکت سے امريکا کو آگاہ کيا تھا، معلومات کے باوجود جيٹ طيارہ مار گرانا سوچی سمجھی سازش ہے۔

فرانسيسی صدر فرانسو اولاند سے ملاقات کے بعد پريس کانفرنس ميں روسی صدر ولادی مير پيوٹن نے امريکا پر تشويش کا اظہار کيا۔

صدر ولادی مير کے مطابق فضائی حدود کی حفاظت کيلئے ديگر طريقوں کے باوجود ترکی نے طيارہ مار گرايا۔

دوسری جانب ترک صدر رجب طيب اردوان نے روس کا الزام بے بنياد قرار ديتے ہوئے کہا کہ اگر معلوم ہوتا کہ طيارہ روس کا ہے تو صورتحال مخلتف ہوتی، دہشتگرد تنظيم سے تيل خريدنے کے روسی الزام کی بھی مذمت کی۔

ترک صدر کا کہنا تھا کہ روس شام ميں بشارالاسد کی حمايت ميں لڑرہا ہے، داعش کيخلاف کارروائيوں ميں شامل نہيں۔

صدر رجب طیب اردوان نے طیارہ مار گرانے پر معذرت سے انکار کرتے ہوئے روس سے معافی مانگنے کا مطالبہ کيا ہے۔ سماء

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube