Tuesday, January 18, 2022  | 14 Jamadilakhir, 1443

پاکستان میں سروسز، صحت کہانی نے 10لاکھ ڈالر جمع کرلئے

SAMAA | - Posted: Mar 15, 2021 | Last Updated: 10 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 15, 2021 | Last Updated: 10 months ago

ٹیلی میڈیسن آرگنائزیشن صحت کہانی نے پاکستان میں اپنی سروسز کو وسعت دینے کیلئے عالمی سرمایہ کاروں سے 10 لاکھ ڈالر جمع کرلئے۔ یہ ادارہ دو خواتین ڈاکٹرز، جو بعد ازاں کاروباری شخصیت بن گئیں، ڈاکٹر سارہ سعید خرم اور ڈاکٹر عفت ظفر آغا نے 2017ء میں قائم کیا تھا۔

اس نیٹ ورک میں 5 ہزار سے زائد خواتین ڈاکٹر موجود ہیں، جو گھروں میں موجود غریب و نادار مریضوں کو ٹیلی میڈیسن بیسڈ ای ہیلتھ کلینک اور موبائل ایپلی کیشن کے ذریعے خدمات فراہم کرتی ہیں۔

صحت کہانی نے عالمی سطح پر اہم سرمایہ کاروں بشمول سعودی عرب کے  اسلامک ڈیولپمنٹ بینک، واشنگٹن کے 10 پرلز وینچرز، سلیکون ویلی کے مینٹوز فنڈ، سنگاپور کے کورین امپیکٹ کلیکٹیو فنڈز اور امپیکٹ انویسٹمنٹ ایکسچینج سے دس لاکھ امریکی ڈالر کی پری سیریز جمع کرلی ہے۔

دیگر بین الاقوامی اور قومی اداروں کے ساتھ ساتھ پاکستان سے کے اے ایس بی اور دن گروپ نے بھی فنڈز جمع کرنے کی مہم میں اپنا حصہ ڈالا۔

عالمی سرمایہ کاروں سے فنڈز جمع ہونے کی اطلاع پرل کانٹی نینٹل ہوٹل کراچی میں منعقدہ ایک تقریب کے ذریعے دی گئی، جس میں وفاقی وزیر برائے انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجیز (آئی سی ٹیز) سید امین الحق، گورنر اسٹیٹ بینک آف پاکستان ڈاکٹر رضا باقر اور رکن قومی اسمبلی خالد مقبول صدیقی کے علاوہ صحت کہانی کے کارپوریٹ اور کاروباری شراکت داروں، پاکستان کے بینکنگ، فارما، انشورنس اور دیگر کاروباری شعبہ جات سے تعلق رکھنے والی اہم شخصیات نے شرکت کی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سید امین الحق نے کہا کہ کاروباری خواتین کو ٹیکنالوجی میں آگے بڑھتے ہوئے دیکھنا خوش آئند بات ہے، میری خواہش ہے کہ ایسی اور بھی تقریبات منعقد ہوں جس میں خواتین کی قیادت میں کام کرنیوالے ادارے، پاکستان کیلئے غیر ملکی سرمایہ جمع کررہے ہوں۔

گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر نے صحت کہانی کو اس سنگ میل پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ ان کا یہ کام کاروباری خواتین کیلئے ایک عملی مثال ہوگا کہ صنف و جنس کو کامیابی کے راستے میں کبھی بھی رکاوٹ نہیں بننے دینا چاہئے۔

ڈاکٹر سارہ سعید خرم نے اپنے خطاب میں کہا کہ سرمایہ کاروں کا صحت کہانی پر اعتماد، اسے بڑے پیمانے پر حاصل ہونیوالی اس کامیابی کا عکاس ہے، جس میں اس نے صرف گزشتہ 12 ماہ میں 425 فیصد کی زبردست ترقی اور نمو حاصل کی۔

ادارے کی شریک بانی اور سی او او، ڈاکٹر عفت ظفر کا کہنا تھا کہ ہم صحت کہانی پر اعتماد کرنے پر تمام سرمایہ کاروں کے شکر گزار ہیں اور ہم اپنے کامیاب بزنس ماڈل کو سال 2021ء اور اس کے بعد بھی بڑے پیمانے پر صارفین کی خوردہ مارکیٹ میں دوبارہ پیش کرنے پر انتہائی مسرور ہیں۔

دی وینچرز کے بانی چینگ سی اونگ نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم صحت کہانی میں سرمایہ کاری کرنے اور اس کے پیچھے کام کرنے والی دو انتہائی باصلاحیت خواتین کی معاونت کرنے پر بہت خوش ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ صحت کہانی ٹیلی میڈیسن کے ذریعے ابھرتے ہوئے ممالک کیلئے ایک انتہائی تخلیقی اور قابل وسعت طریقے سے بڑے پیمانے پر اثرات مرتب کررہا ہے اور ہم ان کے اس سفر کا حصہ بننے کے منتظر ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube