Tuesday, January 18, 2022  | 14 Jamadilakhir, 1443

خودمختار اتھارٹیز کا قیام،پشاور کے سرکاری اسپتالوں میں ڈاکٹرز کا احتجاج

SAMAA | and - Posted: May 2, 2019 | Last Updated: 3 years ago
Posted: May 2, 2019 | Last Updated: 3 years ago

خیبرپختونخوا میں ڈاکٹر تنظیموں نے ڈی ایچ اے اور آر ایچ اے ایکٹ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کے پی اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنا دے دیا،لیڈی ریڈنگ اسپتال میں او پی ڈی سروسز بند کردی گئی ۔

خیبر پختونخوا کی ڈاکٹرز تنظیموں کی جانب سے اسپتالوں کی نجکاری ،ڈی ایچ اے اور آر ایچ اے ،اسپتالوں میں سیاسی مداخلت اور پی آئی پی کلچر کے خاتمے سمیت دیگر مطالبات کے لیے سراپا احتجاج ہیں،لیڈی ریڈنگ اسپتال میں صوبے کے تمام ڈسٹرکٹ کی ڈاکٹر تنظیمیں شامل ہیں۔

ڈاکٹر کونسل کے مطابق اسپتالوں کی نجکاری منظور نہیں،ڈی ایچ اے اور آر ایچ اے ایکٹ تسلیم نہیں،اسپتالوں میں سیاسی مداخلت اور آئی آئی پی کلچر ختم کیا جائے،سول سرونٹس کی بجائے کنٹریکٹ،ادارہ جاتی ملازمین کا منصوبہ قبول نہیں۔

خیبر ٹیچنگ اسپتال اور حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں بھی ڈاکٹروں کی ہڑتال جاری ہے۔ لیڈی ریڈنگ اسپتال میں ہڑتالی ڈاکٹر او پی ڈی میں گھس گئے اور سروسز بند کردی، جلوس کی شکل میں ڈاکٹرز اسمبلی چوک کے لیے روانہ ہوئے اور اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنا دیا۔

دھرنے میں شریک ڈاکٹروں  نے خیر روڈ کو بھی ہر طرح کی ٹریفک کے لئے بند کردیا۔ ڈاکٹروں کی ہڑتال کے باعث جہاں مریضوں کو شدید پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے تو وہی روڈ کی بندش کے باعث عام رل گئے، احتجاجی ڈاکٹرز کو منانے کے لئے ڈپٹی کمشنر اور ایس ایس پی آپریشن ظہور بابر آفریدی بھی پہنچے جنھوں نے احتجاجی ڈاکٹرز کو منانے کی بھرپور کوشش کی۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube