Wednesday, October 27, 2021  | 20 Rabiulawal, 1443

خواتین مردوں سے تین گنا زیادہ بولتی ہیں

SAMAA | - Posted: Jan 14, 2019 | Last Updated: 3 years ago
SAMAA |
Posted: Jan 14, 2019 | Last Updated: 3 years ago

بے شک گپ شپ زندگی کا حصہ ہے اور لوگوں کو آپس میں باتیں کرنی چاہیئے مگر کچھ لوگ یہ حد پار کرکے اتنا بولتے ہیں کہ سامنے والے اکتا جاتے ہیں۔ ایک تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ باتونی خواتین خوشگوار زندگی گزانے کی خواہش مند تو ہوتی ہیں، تاہم وہ اپنی باتونی عادت سے دوسروں کی زندگی میں مشکلات پیدا کرتی ہیں۔

برطانیہ میں کی گئی تحقیق کے مطابق خواتین ایک دن میں پانچ گھنٹے بے مقصد باتوں اور گپوں میں ضائع کرتی ہیں۔

برطانوی تحقیق کے مطابق ایسی باتونی خواتین اپنی اس فطرت کے سبب کسی بھی ماحول میں جلد گھل مل جاتی ہیں۔ خواتین کے بارے میں یہ خیال عام ہے کہ وہ مردوں کے مقابلے میں زیادہ باتونی ہوتی ہیں۔ گو کہ ایسے مردوں کی بھی کمی نہیں ہے جو دوسروں کو بولنے کا موقع ہی نہیں دیتے لیکن پھر بھی ماہر نفسیات کے نزدیک خواتین اوسطاً مردوں کی نسبت تین گنا زیادہ بولتی ہیں۔ کیونہ قدرتی طورپر عورت اور مرد کے دماغ میں فرق ہوتا ہے اور عورت کے دماغ کے وہ حصے جن کا تعلق بولنے سے ہے، زیادہ فعال ہوتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے اس میں تعجب کی بات نہیں کہ مرد اکثر کم گو ہوتے ہیں جبکہ ایک عام عورت نیند سے بیداری کے بعد ایک تہائی یا دن میں پانچ گھنٹوں سے زیادہ وقت گپ شپ لگانے میں گزارتی ہیں۔

ریسرچ کا دلچسپ رخ یہ بھی ہے کہ گھریلو یا ورکنگ وومن ہر روز 298 منٹ بے مقصد گفتگو کرتی ہیں اور عموماً خواتین کی گفتگو میں دیگر لوگوں کے مسائل زیر بحث آتے ہیں، رپورٹ میں یہ بھی پتہ چلا ہے خواتین ایک دن میں 24 منٹ اپنے وزن، خوراک اور لباس کے سائز پر بھی بحث کرتی ہیں۔

ایک تہائی خواتین لنچ اور ڈنر کے متعلق گفتگو کرتی ہیں جبکہ ایک چوتھائی باقاعدگی سے کھانوں کی ترکیبوں کے بارے میں تبادلہ خیال کرتی ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube