اسلام آباد کی فضا انسانی صحت کے لیے مضر ہے،یوایس ائیرکوالٹی انڈیکس

January 11, 2019

یو ایس ائیرکوالٹی انڈیکس نے لاہور، کراچی اور پشاور کے بعد راولپنڈی اور اسلام آباد کی فضا کو بھی انسانی صحت کے لئے مضر قراردے دیا۔ فضائی آلودگی کے انسانی صحت پر برے اثرات پڑتے ہیں۔

گاڑیوں سے نکلنے والا دھواں یا پھر بھٹوں  اور ملوں کی چمنیوں سے نکلنے والا کالا زہر،انسان کو صاف ہوا کی فراہمی میں کئی رکاوٹیں درپیش ہیں۔ لاہور، کراچی اور پشاور کے بعد جڑواں شہروں راولپنڈی اسلام آباد کی ہوا بھی صحت کے لیے مضر قراردے دی گئی۔

سیٹلائٹ سے مختلف ممالک کی ائیرمانیٹرنگ کرنے والے ادارے یوایس ائیر کوالٹی انڈیکس نے 2019 کی نئی ریڈنگ جاری کردی ہے تاہم ادارہ برائے ماحولیاتی تحفظ نے اے کیو آئی کی ریڈنگ پرہی سوال اٹھا دیا۔

ڈپٹی ڈائریکٹر ٹیکنیکل ای پی اے ڈاکٹر محسنہ نے بتایا کہ اینلائزر پرمنحصر ہے کہ وہ کسی خاص جگہ سے ڈیٹا لے کردے رہے ہوں۔ وہاں پر اسکول کالج ہوسکتے ہیں یا کسی اور وجہ سے آلودگی ہوسکتی ہے۔

ادارہ برائے ماحولیاتی تحفظ کے تحفظات اپنی جگہ لیکن ماحولیاتی ماہرین تو اس رینکنگ سے متفق نظرآتے ہیں کہ انسانی صحت پر اس کے اثرات بھی کافی خوفناک ہیں۔

ماحولیاتی ماہرین کہتے ہیں کہ وفاقی دارلحکومت کی ہوا کو صرف ایک اسٹیشن سے مانیٹر نہیں کیا جا سکتا جبکہ ادارہ برائے ماحولیاتی تحفظ کا بنایا گیا اپنا ائیر کوالٹی انڈیکس عالمی معیار کے مطابق نہیں۔