خیبرپختونخوا میں تین روزہ انسداد پولیو مہم شروع،باجوڑ میں ملتوی

Samaa Web Desk
March 12, 2018

پشاور : خیبرپختونخوا میں تین روزہ انسداد پولیو مہم کا آغاز ہوگیا،مہم کے دوران افغان پناہ گزین کیمپوں میں موجود بچوں کو بھی پولیو کے قطرے پلائے جائیں گے، جب کہ باجوڑ ایجنسی میں سیکیورٹی خدشات کے بعد انسداد پولیو مہم ملتوی کردی گئی ہے۔

صوبہ خیبر پختونخوا کے سترہ اضلاع میں تین روزہ انسداد پولیو مہم کا آغاز آج سے ہوگیا ہے۔ تین روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران فاٹا کی سات ایجنسیوں اور چھ نیم قبائلی علاقوں میں پانچ سال سے کم عمر بچوں کو گھر گھر جا کر پولیو کے قطرے پلائیں گے، جب کہ کے پی کے میں بنے افغان پناہ گزینوں کے کیمپوں میں بھی جا کر پانچ سال سے کم عمر بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائیں گے۔

ایمرجنسی آپریشن سینٹر (ایکو) کی جانب سے جاری بیان کے مطابق باجوڑ ایجنسی میں سیکیورٹی خدشات کے باعث انسداد پولیو مہم کو ملتوی کردیا گیا ہے، پولیو مہم کا انعقاد رواں ماہ انیس مارچ سے کیا جائے گا۔

خیبر پختونخوا میں انسداد پولیو مہم پشاور، چار سدہ، نوشہرہ، مردان، صوابی، مالاکنڈ، سوات، بالائی اور زیریں دیر، چترال، کوہاٹ، کرک، ہنگو ، بنوں، لکی مروت ،ٹانک اور ڈیرہ اسماعیل خان میں شروع ہوگی۔

پولیو ٹیمیں تمام بچوں کو پولیو سے بچاو کے قطرے پلانے کے لئے ریلوے اسٹیشنوں، بس اڈوں، عوامی مقامات اور افغان پناہ گزینوں کے کیمپ میں موجود ہوں گی۔

کے پی کے وزارت صحت کی جانب سے جاری اعداد ع شمار کے مطابق انسداد پولیو مہم کے دوران 54لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے۔ انسداد پولیو مہم کیلئے انیس ہزار ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں، مہم میں شامل ورکرز کی سخت نگرانی کیلئے صوبے بھر میں 36 ہزار سے زائد پولیس اور سیکیورٹی اہل کاروں کو تعینات کیا جا رہا ہے۔