موسم کی تبدیلی ، نزلہ، زکام کی علامات

SAMAA | - Posted: Nov 6, 2017 | Last Updated: 4 years ago
SAMAA |
Posted: Nov 6, 2017 | Last Updated: 4 years ago

نزلہ اور زکام وہ بیماریاں ہیں جن میں ہر دوسرا انسان آئے روز مبتلا نظر آتا ہے جب کہ یہ بیماری وائرس سے پھیلتی ہیں اور ایک انسان سے دوسرے انسان تک با آسانی منتقل ہوجاتی ہیں ۔

عام طور پرایک سمجھے جانے والی یہ دونوں بیماریاں ایک دوسرے سے بالکل مختلف ہیں ، لیکن دونوں کی علامات تقریباً ایک جیسی ہونے کی وجہ سے ان میں فرق کرنا بے حد مشکل ہوتاہے ۔

بخار: نزلے کو عموماً سردی بھی کہا جاتا ہے یہ وائرس انفیکشن ہوتا ہے جس سے انسان کو معمولی بخارہوجاتا ہے جبکہ زکام کی صورت میں تیزبخار چڑھتا ہے جس سے سرمیں درد کی صورتحال پیدا ہوجاتی ہے اور پورے جسم میں شدید درد ہوتا ہے ۔

ناک کا بہنا: نزلے اور زکام کا سب سے واضح فرق جس سے ان کی شناخت کرنا نہایت آسان ہے وہ یہ ہے کہ نزلے میں انسانی ناک بہتی ہے اور گلے میں خراشیں پڑجاتی ہیں جب کہ زکام میں بلغم کا ریشہ بن جاتا ہےجو ناک میں جمع ہوجاتا ہے جس کی وجہ سے سانس لینے میں دشواری ہوتی ہے اور کئی بار تو انسان کو دم گھٹتا ہوا محسوس ہوتا ہے ۔

تھکاوٹ: نزلے میں انسان ہلکی سی تھکاوٹ محسوس کرتا ہے جب کہ زکام میں تھکن کا احساس بہت زیادہ ہوتا ہے ۔

کھانسی: نزلے کی صورت میں بلغمی اورخشک دونوں اقسام کی کھانسی ہوتی ہے جب کہ زکام میں صرف بلغمی کھانسی ہوتی ہے ۔

چھینکیں: نزلے میں بعض اوقات انسان کے چھینکنے کے باعث وائرس دوسرے انسان تک منتقل ہوجاتے ہیں اور کبھی ایسا نہیں بھی ہوتا جب کہ زکام میں متاثرہ مریض سے وائرس دوسرے انسان تک منتقل ہوتا ہے ۔

یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ زکام ، نزلے سے زیادہ خطرناک ہوتا ہے اور ان تمام علامات کی صورت میں فوراً ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہئے۔

زکام کے بارے میں ایک مفروضہ بہت عام ہے کیونکہ یہ وائرل انفیکشن کی وجہ سے ہوتا ہے اس لیے علاج کرانے یا نہ کرانے کی صورت میں یہ سات دن کے اندرخودبخود ختم ہوجاتا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube