Friday, December 3, 2021  | 27 Rabiulakhir, 1443

اٹرنلزکےپریمیئرمیں کمیل ننجانی کا پاکستانی لباس وائرل

SAMAA | - Posted: Oct 20, 2021 | Last Updated: 1 month ago
Posted: Oct 20, 2021 | Last Updated: 1 month ago

مارول سنیماٹک یونیورس میں نظرآنے والے پہلے پاکستانی اداکار کمیل ننجانیلاس اینجلس میں فلم’ اٹرنلز’ کے پریمیئر میں جامنی رنگ کی شیروانی میں ریڈ کارپٹ پرنظرآئے۔

کمیل کی یہ شیروانی فیشن ڈیزائنرعمرسعید کی تیار کردہ تھی جو ایونٹ کی تصاویر منظرعام پر آنے کے فورا بعد ‘ٹاک آف دی ٹاؤن’ بن گئی ۔ کمیل کے مطابق ، وہ ہمیشہ سے شیروانی پہننا چاہتے تھے کیونکہ یہ بہت زبردست لگتی ہے لگتا ہے اور انہیں فلم میں اپنے سپرہیرو کنگو کے لباس کی یاد دلاتی ہے۔

اداکار نے اپنی والدہ شبانہ سے کہا تھا کہ وہ پاکستان میں ایسا ڈیزائنرڈھونڈنے میں مدد کریں جو اس خاص موقع پران کیلئے لباس تیارکرسکے۔ کمیل کا کہنا ہے کہ ‘ میں پاکستان کے ڈیزائنرکاتیار کردہ لباس پہننا چاہتا تھا ، نہ کہ امریکہ میں موجود کسی پاکستانی ڈیزائنرکا ، لہذا میں نے اپنی والدہ کو فون کیا اور انہوں ن مجھے پاکستان میں 3 حیرت انگیز ڈیزائنرز کے نام بتائے۔

کمیل اوران کے اسٹائلسٹ جین یانگ کے انسٹاگرام پرعمر سعید کے ساتھ رابطے کے بعد انہوں نے فلم میں کمیل کے کیے جانے والے گیٹ اپ کی تصاویرڈیزائنر کو بھیجیں۔

عمرنے بعد ازاں انسٹاگرام اسٹوریزمیں فلم کے پریمیئرمیں شیروانی پہنے کمیل کی تصاویر شیئر کیں اور اداکار کا شکریہ ادا کیا۔

کمیل کے مطابق، ‘اٹرنلز پریمیئ مثبت جذبات سے بھراتھا جن کا میں تصور کرسکتا ہوں، میں عمر سعید کی شیروانی پہن کر بہت خوش ہوا۔

اداکار نے فلم کی ہدایتکارکلوئی ژاؤ کو بہترین فلم سازوں میں سے ایک کہا۔

چینی نژاد کلوئی ژاؤ رواں سال 93ویں آسکرایوارڈ کی تقریب میں فلم نومیڈ لینڈ کیلئے بہترین ہدایتکارہ کا ایوارڈ جیتنے والی پہلی ایشیائی خاتون ہیں۔ نومیڈ لینڈ نے فلمی دنیا کے سب سے بڑے ایوارڈ آسکر کا میلہ لوٹتے ہوئے 6 ایوارڈز اپنے نام کیے تھے۔

کمیل نے بتایا کہ کنگو کا کردار ادا کرنے کیلئے ان کے انتخاب کو 2018 میں حتمی شکل دی گئی تھی اور سمبر 2019 میں اس کردار کے لیے ان کی جسمانی تبدیلی لائی جانے والی تبدیلیاں سامنے لائی گئی تھیں۔ اداکار نے اس تبدیلی میں مدد کیلئے بہترین ماہرین غذائیت اور ٹرینرزکی خدمات دینے پر مارول اسٹوڈیو کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے کہا کہ، مجھے خوشی ہے کہ میں ایسا دکھتاہوں ، لیکن میں سمجھتا ہوں کہ میں نے پہلے کبھی ایسا کیوں نہیں کی۔ ان وسائل اور وقت کے بغیر یہ ناممکن ہوتا۔

اٹرنلز کے مرکزی کرداروں میں انجلینا جولی ، سلمیٰ ہائیک ، کٹ ہارنگٹن اور رچرڈ میڈن شامل ہیں ہیں۔ فلم جیک کربی کے 1976 میں لکھے گئے مزاحیہ ناول ‘ دی اٹرنلز’ سے ماخوذ ہے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube