Thursday, September 23, 2021  | 15 Safar, 1443

عثمان مختار کو مبینہ ہراساں کرنے والی خاتون سامنے آگئیں

SAMAA | - Posted: Jul 28, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Jul 28, 2021 | Last Updated: 2 months ago

عثمان مختار کومبینہ طور پر ہراساں اور بلیک میل کرنے والی خاتون مہروز وسیم نے اداکار کے الزامات کے بعد سامنے آتے ہوئے انسٹاپوسٹس میں نئے انکشافات کرڈالے۔

اداکارنے گزشتہ روز انسٹا پوسٹ میں خاتون آرٹسٹ پر خود کو ہراساں کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ خاتون کی جانب سے ڈیڑھ برس سے زائد عرصے سے مجھے ہراساں، بلیک میل کیا جارہا ہے اور ڈرایا دھمکایا جارہا ہے، میرے گھر والوں بالخصوص میری والدہ اور دوستوں کو آن لائن ہراسانی کے ذریعے نشانہ بنایا گیا اور تکلیف دہ تبصرے کیے گئے ۔معاملے سے میری ذہنی صحت متاثر ہوئی لیکن میں خاموش رہا اور حکام کو نمٹنے دیا لیکن اب تھک گیا ہوں،چاہتا تھاکہ یہ مسئلہ خاموشی سے حل ہوجائے تاکہ خاتون سے متعلق منفی تاثر نہ جائے لیکن میرے کردار کو مسلسل نشانہ بنایا جارہا ہے جس پر خاموش نہ رہنے کا فیصلہ کیا۔

عثمان مختار نے مبینہ ہراساں کرنے والی خاتون کی شناخت ظاہر نہ کرتے ہوئے بتایا کہ 2016 میں ایک خاتون آرٹسٹ کے ساتھ ایک میوزک ویڈیو پر کام کیا تھا اور اس پورے شوٹ کے دوران ویڈیو سے متعلق تخلیقی بنیادوں پر اختلافات رہے اور کئی مرتبہ بحث بھی ہوئی ۔ پھروہ خاتون کے پروجیکٹ سےعلیحدہ ہوگئے تھے۔

خاتون آرٹسٹ نے ڈیڑھ سال تک ہراساں کیا، عثمان مختار

اداکار کے مطابق کچھ سالوں بعد خاتون نے سوشل میڈیا پر ان سے متعلق جھوٹے دعوے کرنے کا فیصلہ کیا، وہ میرے کیخلاف پوسٹس کررہی ہیں، مسلسل 3 برس سے میسجز کررہی ہیں لیکن جواب نہیں دیا۔معاملہ سامنے آنے پر شوبز ساتھیوں نے بھی اداکار کے حق میں آواز اٹھاتے ہوئے انہیں اپنی حمایت کا یقین دلایا تھا۔

اب مہروز وسیم نامی خاتون نے اس حوالے سے دیگرانسٹاپوسٹس کے علاوہ ایف آئی اے کے نام اپنا طویل وضاحتی بیان بھی شیئر کیا ہے۔ خاتون کے مطابق انہوں نے عثمان مختار کو 2016 میں اپنے گانے (آزاد) کیلئے بطور ڈائریکٹر کاسٹ کیا تھا۔ ان کی فیس بہت زیادہ تھی تاہم رعایت کی یقین دہانی پر اداکار کے ساتھ کام کو ترجیح دی لکن جلد ہی ویڈیو پر کام کرنے کے بجائے عثمان مختارنے ذاتی مسائل اورگرل فرینڈ سے متعلق باتیں بتانا شروع کردیں۔

مہروزوسیم نامی آرٹسٹ نے الزام عائد کیا کہ عثمان مختار بتاتے تھے کہ انہیں کیسی خواتین چھی لگتی ہیں، ایسی باتوں سے تنگ آگئی تھی اور سمجھ میں آنے لگا تھا کہ عثمان نے فیس میں رعایت کیوں دی تھی۔ ایک بار انہیں برتھ ڈے پارٹی پرمدعو کیا تو اداکارنے چھیڑ خانی بھی کی۔

خاتون نے پوسٹ میں عثمان مختار کوپیغامات بھیجنے کا بھی اعتراف کیا اور کہا کہ مجھ پرمن گھڑت الزامات عائد کر کے ایف آئی اے میں مقدمہ دائر کیا گیا۔ عثمان مختار کی جانب سے وقت پر کام نہ کرنے پراپنا گانا خود تیار کرکے ریلیز کیا۔

مہروز کے فروری2021 میں ہی انسٹاگرام اکاؤنٹ کا جائزہ لیا جائے تو وہ ڈیجیٹل کانٹینٹ کری ایٹر ہونے کے ساتھ ساتھ گلوکاری بھی کرتی ہیں اس کے علاوہ وہ اپنا یو ٹیوب چینل بھی چلاتی ہیں۔ مہروز می ٹو مہم کی کارکن ہیں اور انہوں نے پوسٹ میں گلوکارہ میشا شفیع اورسماجی کارکن لینا غنی کو بھی ٹیگ کیا ہے۔

 مہروز نے ایک اور پوسٹ میں عثمان مختار کا آڈیو پیغام بھی شیئرکیاتھا جو بعد ازاں ڈیلیٹ کردیاگیا۔ اداکار انگریزی زبان میں مہروز کو مخاطب کرتے ہوئے کہہ رہے ہیں ‘
میرے پاس الفاظ نہیں ہیں، آپ شاید اب تک کی بدترین کلائنٹ ہیں جن کے ساتھ میں نے کام کیا۔ اور آپ سمجھتی نہیں ہیں کہ ڈائریکٹرزکے حقوق کیا ہوتے ہیں اور آپ نے ویڈیو کے ساتھ کیا کیا ہے۔ مجھے یہ بات شدید غصہ دلا رہی ہے کہ ہم متعدد باریہ بات زیر بحث لائے لیکن آپ ابھی تک سمجھ نہیں پارہی ہیں ۔ میں ایسا کچھ نہیں چاہتا جہاں میری ٹیم ظاہرہورہی ہو تو آپ یہ کیوں کررہی ہیں۔ آپ پوری دنیا کے مقابلے میں الگ ہی طریقے سے کام کرتی ہیں اور میں دیکھنا چاہتا ہوں کہ دوسرے لوگ کیسے آپ کے ساتھ کام کرلیتے ہیں’۔

یہ آڈیو پیغام شیئرکرنے والی مہروز کا کہنا تھا کہ یہاں عثمان مختار مجھے ایک تصویر ڈیلیٹ کرنے کیلئے دھمکیاں دے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ عثمان مختار نے 28 جولائی کوہی ایک اور پوسٹ میں اپنی حمایت کرنے پرساتھی اداکاروں کا شکریہ اداکرتے ہوئے لکھا تھا کہ خاتون نے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر جو وضاحتی بیان جاری کیا اسے ایف آئی اے تسلیم نہیں کرتا، کیونکہ ادارے میں بند لفافے میں دستخط اور اسٹمپ کے ساتھ بیان جمع کروانا پڑتا ہے۔

دوسری جانب عثمان مختار نے تازہ انسٹا پوسٹ میں واضح کیا ہے کہ وہ اپنی حمایت پرشکرگزار ہیں لیکن یہ ہرگز نہیں چاہیں کہ مذکورہ خاتون کو برا بھلا کہا جائے، اسی لیے ان کا نام بھی ظاہرنہیں کیاتھا۔

اداکار کے مطابق یہ معامہ اب حکام کے حوالے ہے اور وہی اسے حل کریں گے۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube