پروڈکشن ہاوسز عملے کی عزت کریں، یاسر حسین کا مطالبہ

SAMAA | - Posted: Jun 4, 2021 | Last Updated: 2 months ago
Posted: Jun 4, 2021 | Last Updated: 2 months ago

اداکارہ یاسر حسین نے مطالبہ کیا ہے کہ ڈرامہ و فلم بنانے والے پروڈکشن ہاوسز اپنے عملے کی عزت کریں۔

گزشتہ روز کراچی کے علاقے ڈیفنس میں ڈرامے کی شوٹنگ کے دوران ہونے والی فائرنگ کے معاملے پر اداکار یاسر حسین کا ردعمل بھی سامنے آگیا ۔

یاسر حسین نے انسٹاگرام اسٹوری میں بتایا کہ شوٹنگ کے دوران گارڈ نے پروڈیوسرز یا اداکاروں پر گولیاں نہیں چلائیں بلکہ ان غریب افراد پر چلائیں، جو ایک ہزار روپے کے عوض یومیہ اجرت پر کام کرتے تھے، جو گھر سے باہر پارکنگ میں کھانا کھاتے ہیں اور ایئرکنڈیشنڈ کمرے میں نہیں بیٹھتے۔

یاسر حسین نے مزید لکھا کہ مذکورہ واقعے کی سزا گارڈ کے ساتھ ساتھ پروڈکشن ہاؤس اور اس بدصورت سسٹم کو بھی ملنی چاہیے۔

انہوں نے اپنی ایک اور اسٹوری میں مطالبہ کیا کہ تمام پرڈکشن ہاؤس عملے کو انشورنس دیں ، یومیہ کام کرنے والوں کو ماہانہ تنخواہ ہر نوکری دیں ۔

انہوں نے کہا کہ جہاں کاسٹ کیلئے ایک اے سی آتا ہے وہاں عملے کیلئے ایک اے سی اور آجائے، عملے کے کام کے اوقات کا خیال رکھا جائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ قسم سے عملے کے لوگ بھی انسان ہوتے ہیں بھروسہ کریں ۔

یاسر حسین نے یہ واضح نہیں کیا کہ مذکورہ ڈرامے کی شوٹنگ کون سا پروڈکشن ہاؤس کر رہا تھا اور کس ڈرامے کی شوٹنگ کی جا رہی تھی؟

تاہم سماء کی رپورٹ کے مطابق جہاں فائرنگ کا واقعہ پیش آیا وہاں سیونتھ اسکائے پروڈکشن ہاؤس کے ’محبت داغ کی صورت‘ نامی ڈرامے کی شوٹنگ کی جا رہی تھی، ڈرامے کی کاسٹ میں اداکار سمیع خان اور عاصمہ عباس سمیت دیگر اداکار شامل ہیں جو فائرنگ سے محفوظ رہے۔

پولیس کے مطابق شوٹنگ کے لیے حاصل کیے گئے بنگلے پر تعینات گل بی نامی گارڈ نے کار پارکنگ میں بیٹھے عملے پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 9 افراد زخمی ہوئے، جنہیں طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

زخمی ہونے والے افراد کو جناح اسپتال منتقل کیا گیا جن کی شناخت شہزاد، زاہد، فرحان، ادریس، اکبر، شیر خان اور قمبر کے نام سے ہوئی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube