Tuesday, October 26, 2021  | 19 Rabiulawal, 1443

علی ظفرنےمیشاشفیع سمیت9 افرادکیخلاف ایف آئی آردرج کروادی

SAMAA | - Posted: Sep 30, 2020 | Last Updated: 1 year ago
SAMAA |
Posted: Sep 30, 2020 | Last Updated: 1 year ago

تصویر:سماء ڈیجیٹل

گلوکارعلی ظفرنے سوشل میڈیا پر خود کو بدنام کرنے پر میشا شفیع اور دیگر 8 افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کروادی ہے۔

ایف آئی اے سائبرکرائم ونگ کی جانب سے پیر28 ستمبرکو درج کرائی جانے والی اس ایف آئی آرمیں میشا شفیع کے علاوہ عفت عمر،علی گل پیر، حمنہ رضا ، لینا غنی ، فاریہ ایوب ، ماہم جاوید ، سید فیضان رضا ، اور حسیم الزمان کے نام شامل ہیں۔

ان تمام افراد پرپی ای سی اے کی دفعہ 20 (فرد کے وقار کے خلاف جرائم) اور پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 109 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

علی ظفرنے ایک سے زائدبار جنسی طور پرہراساں کیا، میشا شفیع

ایف آئی آرکے متن کے مطابق کچھ افراد علی ظفر کیخلاف ٹوئٹر ، فیس بک اور انسٹاگرام اکاؤنٹ پرانہیں بدنام کرنے والی پوسٹس کررہے ہیں اور گلوکار کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر ان کی کردار کشی کی جارہی ہے۔

علی ظفرنے موقف اختیارکیا ہے کہ میشا شفیع نے 19 اپریل 2018 کو اپنا ٹوئٹراکاونٹ میرے خلاف تحقیرآمیزجملے اورجھوٹے الزامات پوسٹ کرنے کے لئے استعمال کیا۔ ملزمان کو دفاع کے کئی مواقع ديے گئے ليکن وہ تسلی بخش جواب نہيں دے سکے۔

علی ظفرکو2 ارب روپے کا نوٹس، میشاشفیع نے ٹوئٹرسے رخصت لے لی

اپریل 2018 میں میشا شفیع نے ٹوئٹر پرعلی ظفرکیخلاف الزام عائد کیا تھا کہ وہ انہیں ایک سے زیادہ مواقع پرجسمانی طورپرہراساں کرچکے ہیں، جواب میں علی ظفرنے میشا کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائرکیاتھا۔

گلوکارنے الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا تھاکہ میری ساکھ کو پہنچنے والے نقصان اورجھوٹے الزامات عائد کرنے پرمیشا شفیع ہرجانہ ادا کریں۔

اس وقت سے یہ دونوں قانونی لڑائی میں مصروف ہیں۔

WhatsApp FaceBook
تازہ ترین
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube