Tuesday, September 29, 2020  | 10 Safar, 1442
ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

اداکار راشد محمود وزيراطلاعات پر برس پڑے

SAMAA | - Posted: Sep 16, 2020 | Last Updated: 2 weeks ago
SAMAA |
Posted: Sep 16, 2020 | Last Updated: 2 weeks ago

پی ٹی وی نے620کاچیک دینےپر راشدمحمودسےمعافی مانگ لی

سينئر اداکار راشد محمود نے وزيراطلاعات سينيٹر شبلی فراز کے بیان پر برہمی کا اظہار کیا۔

اداکار راشد محمود کا کہنا ہے کہ پريس کانفرنس کے دوران شبلی فراز سے ميرے بارے ميں سوال کيا گيا تو انکا کہنا تھا کہ ايم ڈی پی ٹی وی کی طرف سے ويڈيو پيغام آيا ہے جس ميں معاملہ حل ہوگيا ہے۔

راشد محمود کا کہنا ہے کہ ميرا تمام مسئلہ جان بوجھ کر پی ٹی وی کی کوتاہی کا نتيجہ ہے،ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی وی کے تمام پراجيکٹس کا باقاعدہ کنٹريکٹ ہوتا ہے جس کی اپروول کے بعد چيک بنتا ہے ليکن اس بار پی ٹی وی کی چور بازاری ميرے احتجاج نے پکڑ لی ہے۔

سينئر اداکار نے مطالبہ کيا کہ پی ٹی وی کی انتظاميہ تحريری طور پر اپنی کوتاہی کی معافی مانگے، ان کا کہنا تھا کہ وزيراطلاعات شبلی فراز کو پی ٹی وی کے ايم ڈی کے ايک ميسج پر اعتبار آگيا جبکہ ميں نے اپنی ذہنی کوفت کو دور کرنے کے لئے خود انہيں معاف کيا اور کہا کہ آئندہ پی ٹی وی کے ساتھ کام نہيں کروں گا۔

راشد محمود نے ويڈيو پيغام ميں کہا کہ ميرے پاس ان تمام باتوں کے ثبوت بھی ہيں جو اگر وزيراطلاعات مانگيں گے تو ميں مہيا بھی کر سکتا ہوں۔

واضح رہے کہ سرکاری ٹی وی نے راشد محمود کو محرم الحرام میں مرثیہ پڑھنے پر صرف 620 روپے کا چیک دیا تھا جس پر انہوں نے احتجاجا پی ٹی وی کے ڈراموں اور پروگرامز میں کام نہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی وی میرا مدرانسٹیٹیوٹ ہے، پی ٹی وی ان لوگوں کو نواز رہا ہے جن کا شوبز سے تعلق بھی نہیں ۔ یہ چیک بھیج کر میری سالوں کی خدمات کی تضحیک کی گئی۔

بعدازاں راشد محمود نے ٹوئٹرپر ایک ویڈیو لنک شیئرکرتے ہوئے مداحوں کوبتایا کہ اتنی کم رقم کا چیک بھجوانے پر پاکستان ٹیلیوژن نیٹ ورک کی مینجمنٹ نے معافی مانگ لی ہے۔

راشد محمود نے اس حوالے سے کہا کہ میرے ساتھ موجود مینجر اورپروڈیوسر میرے بچوں جیسے ہیں . احتجاج اِن کیخلاف نہیں بلکہ اس سسٹم کے خلاف تھا کہ آخراسے چلانے والا کون ہے جنہیں مجھے 20 ہزار روپے دیتے ہوئے تکلیف ہو رہی ہے اور اُسی ٹیم کے دوسرے افراد کو 2، 2 لاکھ روپے کا چیک دیا جارہا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube