Thursday, December 3, 2020  | 16 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

ارطغرل کےاداکارعالمی کچرا؟ یاسر اور انوشے اُلجھ پڑے

SAMAA | - Posted: Sep 5, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Sep 5, 2020 | Last Updated: 3 months ago

پاکستانی ادا کار یاسر حسین نے ترک ڈرامہ سیریل ارطغرل کے اداکاروں کو عالمی کچرا قراردیدیا۔

حال ہی میں اپنی ایک انسٹاگرام سٹوری میں یاسر حسین نے ترک اداکاروں کی طرح دکھنے والے دو پاکستانیوں کی تصویر شیئرکی اور ساتھ ہی لکھا کہ “ان کو کوئی نہیں پوچھے گا کیونکہ گھر کی مرغی دال برابر اور باہر کا کچرا بھی مال برابر”۔

یاسرحسین کی اسٹوری کا اسکرین شاٹ سامنے آنے پر اداکارہ انوشے اشرف نے لکھا کہ ” یاسر یہ ذہن میں رکھیں کہ کوئی کچرا نہیں ہوتا، اور حتیٰ کہ اگر ان کا کام پسند کرنے کے قابل نہیں تو بھی دنیا بھر سے اداکاروں کی عزت کی جانی چاہیے “۔

باہمی عزت دینے پر زور دیتے ہوئے ان کا مزید کہنا تھا کہ دنیا بھر سے ہر کسی کی اپنی کوشش ہے ، یہ کہا جاسکتا ہے کہ اگر سیریز میں سے کوئی ایک چیز بھی آنکھیں کھول سکتی ہے تو ارطغرل کچرے سے بہت دور ہے ۔

انوشے اشرف کا کہناتھا کہ لوگ بالآخر اب کچرا مسترد کررہے ہیں، گھر پر کام کریں اور بہتر اسکرپٹ، شوز اور بجٹس دیکھیں، ان کا مزید کہنا تھا کہ لوگوں نے اپنی تصاویر شیئرکرکے کیسے توجہ اپنی جانب مبذول کروالی اور اس کی وجہ سیریل ہی تھی نہ کہ پاکستان میں کسی شخص کی موجودگی کی وجہ سے ، لہذا ہمیں بیرونی ڈراموں کا شکریہ ادا کرنا چاہیے جنہوں نے ان لڑکوں کو سامنے آنے کا حوصلہ دیا، ہمیں صرف اچھائی دیکھنی چاہیے “۔

انوشے اشرف کے رد عمل پر یاسر حسین نے اپنی اس پوسٹ کی وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ پر سکون ہو جاؤ انوشے کیا میں نے اس پوسٹ میں ارطغرل کو مینشن کیا؟ نہیں ۔

یاسر حسین نے مزید کہا کہ ہم بچپن سے جاپان کی استری ، انڈیا کی ساڑھی ، آسٹریلیا کی کٹلری کو اچھا سمجھتے ہوئے ہم نے اپنے پاکستانی مال کو کچرا سمجھا ہے ہمیں اس سوچ کو بدلنے کی ضرورت ہے۔

یاسر حسین نے کہا کہ آج بھی پاکستانی برانڈ نیشنل کی استری سب سے پائیدار ہے وزیر آباد کی کٹلری کمال ہے اور کمالیہ کی کھدر بے مثال ہے مگر آپ نے ساری زندگی انگریزی بولی اور انگریزی گانے بجائے ہیں اپنے شو پر اس لئے آپ کو سمجھانا تھوڑا سا مشکل ہے۔

یاسر حسین نے آخر میں کہا کہ آپ عیش کریں ریلیکس کریں لیکن میری ہر بات کو ارطغرل سے مت جوڑیں اور اپنا خیال رکھیں ہم آپ کی بہت عزت کرتے ہیں۔

WhatsApp FaceBook

2 Comments

  1. معاذ  September 6, 2020 11:04 am/ Reply

    اگر پاکستانی مصنوعات دنیا میں مشہور نہیں ہوئی تو اُسکا ذمےدار باقی قوموں کی مصنوعات کا ہونا نہیں ہے بلکہ ناقص کوالٹی ہے۔ سچ کا سامنا کرنے سے ہی ہر قوم آگے بڑھتی ہے یاسر صاحب

  2. Anonymous  September 8, 2020 3:11 pm/ Reply

    Pls. note language, vocabulary, the statement must follow ethical code. Not below the belt. statement reflects ones personality. Pls. read papers, books on how to criticize. Pls. avoid jealousy, prejudice, and inferiority complex. PLS. AVOID THOSE WORDS WHICH ARE BELOW THE BELT. BE COMPETITIVE.NO JEALOUSY

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube