Wednesday, December 2, 2020  | 15 Rabiulakhir, 1442
ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

سارہ علی خان کووالداورسشانت سنگھ میں کیاچیزمشترک لگی؟

SAMAA | - Posted: Jul 28, 2020 | Last Updated: 4 months ago
SAMAA |
Posted: Jul 28, 2020 | Last Updated: 4 months ago

تصویر: سماء ڈیجیٹل

اداکارہ سارہ علی خان نے والد سیف علی خان اور اپنی پہلی فلم “کیدار ناتھ” کے ہیرو سشانت سنگھ میں ایک مماثلت اپنے فالوورز کے ساتھ شیئر کی ہے۔

سارہ نے انسٹا پر سیف اور سشانت کی تصویر شیئر کی جس میں سشانت کی آخری فلم “دل بیچارہ” کی ہیروئن سنجنا اور کاسٹنگ ڈائریکٹر مکیش چھابڑا بھی موجود ہیں۔

یہ فلم دیکھنے والی سارہ نے سشانت کے ساتھ جڑی یادیں تازہ کرتے ہوئے انسٹا پوسٹ میں دونوں کو جینٹلمین قراردیا۔

کیپشن میں سارہ نے لکھا ” صرف یہ 2 ہیں جنہوں نے مجھ سے وین گوگ، ٹیلی اسکوپس اور بُرج، گٹار، شمالی روشنیوں، کرکٹ، پنک فولئیڈ، نصرت صاحب اور اداکاری کے حوالے سے بات کی، یہ آخری بات ہے جو ان دونوں میں مشترک ہے”۔

سارہ نے پوسٹ میں ہیش ٹیگ کے ساتھ “دل بیچارہ” لکھتے ہوئے بتایا کہ فلم اب ڈزنی ہاٹ سٹار پر موجود ہے۔

سشانت کی اس آخری فلم کی کاسٹ میں سیف علی خان بھی شامل ہیں۔

فلم “دل بیچارہ” 2014 میں ریلیز ہونے والی ہالی وڈ فلم” دی فالٹ ان اور اسٹارز ” کا آفیشل ہندی ری میک ہے جس میں سشانت کے مقابل مرکزی کردارسنجانا سانگھی نے ادا کیا ہے جن کی یہ ڈیبیو فلم ہے۔

فلم کا ٹریلز ریلیز ہونے کے بعد اس میں شامل سشانت کا ڈائیلاگ ” جنم کب لینا ہے اور کب مرنا ہے اس کا فیصلہ ہم نہیں کر سکتے، لیکن جینا کیسے ہے اس کا فیصلہ ہم کر سکتے ہیں” سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہوا۔

اداکار کی موت کے بعد اس فلم سے ڈیبیو کرنےوالی سنجنا سانگھی نے انسٹاگرام پر جذباتی پوسٹ میں ایک ویڈیو شیئر کرتے ہوئے لکھا تھا ” ابھی تو اتنا کچھ باقی تھا سشانت ؟۔

یاد رہے کہ 34 سالہ اداکارسشانت سنگھ راجپوت نے 14 جون کو ممبئی میں اپنی رہائشگاہ پرخودکشی کی تھی۔ اداکار کی رہائشگاہ سے پولیس کو جو کاغذات ملے ان سے ظاہرہوتا ہے کہ وہ ڈپریشن میں مبتلا تھے اور اپنا علاج کروارہے تھے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube