ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

فلم”زندگی تماشا”کاجائزہ اسلامی نظریاتی کونسل نہیں قائمہ کمیٹی لےگی

SAMAA | - Posted: Mar 12, 2020 | Last Updated: 3 months ago
SAMAA |
Posted: Mar 12, 2020 | Last Updated: 3 months ago

اسلامی نظریاتی کونسل کی جانب سے جائزے اور ریلیز سے متعلق فیصلے کی منتظر فلم “زندگی تماشا” کو اب سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے انسانی حقوق دیکھے گی۔

سینیٹ کمیٹی کا اجلاس گزشتہ روز چیئرمین سینیٹر مصطفیٰ نواز کھوکھر کی صدارت میں ہوا جس میں اس بات پر تعجب کاظہار کیا گیا کہ سنسر بورڈ سے 2 بار منظوری کے باوجود فلم پرپابندی عائد کیے جانے کی بات کی گئی۔

مصطفیٰ نوازکھوکھرنے 16 مارچ کو فلم کا جائزہ لینے کا فیصلہ اجلاس میں مرکزی اور صوبائی سنسر بورڈ کی جانب سے بریفنگ لینے کے بعد کیا۔ سینیٹر نے اسلامی نظریاتی کونسل کو بھی دکھانے کا فیصلہ معطل کرنے کی سفارش کی۔

چیئرمین سینٹرل سینسر شپ بورڈ دانیال گیلانی نے اپنی بریفنگ میں بتایا کہ فلم کی کلیئرنس کیلئے گزشتہ سال 26 جولائی کو درخواست دی گئی تھی، 30 جولائی کو منظوری کا سرٹیفکیٹ جاری کیا گیا۔ رواں سال 16
جنوری کو سول سوسائٹی اور تحریک لبیک نے فلم روکنے کی درخواست ک جس کے بعد سندھ اور پنجاب سنسر بورڈ نے فلم کی ریلیز کی اجازت پر نظرثانی کا فیصلہ کیا۔

سینیٹ کمیٹی کے چیئرمین نے میڈیا سے گفتگو میں کہا یہ بھی کہا کہ فلم کا جائزہ لینے کے بعدفیصلہ کریں گے ، اگرکوئی ہوسکتا ہے قابلِ اعتراض بات نظر نہ آئی تو ہوسکتا ہے فلم کی جلد ریلیز کا حکم دیں۔

یاد رہے کہ 22 جنوری کو حکومت کی جانب سے خط موصول ہونے کے بعداسلامی نظریاتی کونسل نے فلم کا جائزہ لینے کیلئے 4 رکنی کمیٹی تشکیل دی تھی جسے فلم کے موضوع اورسماجی اثرات کے حوالے سے جائزہ لینے کے بعد چیئرپرسن کو رپورٹ پیش کرنا تھی۔

فلم پرتنقید

فلم کا ٹریلر جاری ہونے کے بعد سے ہی کافی تنقید کی گئی جس کے باعث فلم پہلا ٹریلر یوٹیوب سے ہٹادیا گیا تھا جسے معمولی ترمیم کے بعد دوبارہ اپ لوڈ کیا گیا تاہم اس کی مخالفت میں کمی نہیں آئی۔

سرمد کھوسٹ نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ کے ذریعے وزیراعظم عمران خان کے نام ایک کھلا خط بھی لکھا تھا جس میں فلم کی نمائش میں حائل رکاوٹوں کا ذکر کیا گیا تھا جبکہ ہدایتکار، پروڈیوسر اور عملے کو دھمکیاں ملنے کا بھی انکشاف کیا تھا۔

سرمد کھوسٹ کی ہدايتکاری ميں بننے والی اس فلم کے مرکزی کرداروں میں عارف حسین، سمیعہ ممتاز، علی قریشی اور ایمان سلیمان شامل ہیں۔

اندرون لاہور کی زندگی کے تلخ حقائق ،نشيب و فراز اور گلی محلوں میں بسنے والے عام کرداروں کے گرد گھومتی فلم ”زندگی تماشا‘‘ریلیز سے قبل ہی بوسان فلم فیسٹیول میں’’ کم جیسوئک‘‘ ایوارڈ بھی حاصل کرچکی ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube