ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

میں مردکو اچھی عورت کےبرابر نہیں سمجھتا، خلیل الرحمان قمر

SAMAA | - Posted: Jan 16, 2020 | Last Updated: 1 month ago
SAMAA |
Posted: Jan 16, 2020 | Last Updated: 1 month ago

مشہور و معروف ڈرامہ ’میرے پاس تم ہو‘کے رائٹر خلیل الرحمان قمر کا کہنا تھا کہ ڈرامے میں دانش کا کردار دراصل مردوں کی تربیت کررہا تھا۔

سماء کے پروگرام 7 سے 8 میں گفتگو کرتے ہوئے معروف رائٹر خلیل الرحمان قمر نے ڈرامہ ’میرے پاس تم ہو‘کی کہانی کے حوالے سے کہا کہ ہمارے یہاں بہت بدنام زمانہ مسئلہ چلتا رہتا ہے کہ کسی کو غیرت کے نام پر مار دیا،تاہم میں چاہتا تھا کہ میرا ہیرو نرم مزاج ہو جو سب کچھ دیکھتے ہوئے عورت کو جانے کی اجازت دے ۔

ڈرامہ میں دانش (ہمایوں) اور مہوش (عائزہ ) کے کردار کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ دانش تو دراصل مرد کی تربیت کررہا تھا اس میں درندہ صفت عورتوں کا ماننا تھا کہ مہوش گناہ بھی کرے اور معافی بھی مل جائے اور انہیں سوشل سیٹ اپ کا حصہ بھی بنادیا جائے تو ایسا میں کبھی نہیں مانوں گا اور یاد رکھیں وہ کوئی بھی نہیں مانے گا۔

خلیل الرحمان قمر کا کہنا تھا کہ عورت جب اس طرح کا گناہ کرے گی تو کوئی بھی سوسائٹی ہو جو وہ بانڈنگ میں چیٹ کرتی ہے تو اصل میں وہ اپنی بے عزتی کرواتی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ہم ایک معاشرے میں رہتے ہیں معاشرے کی ایک سوچ ہوتی ہے جس کو آپ نے سمجھنا ہوگا معاشرے نے آپ کی سوچ کو ٹیلی نہیں کرنا اور ہم سب اس کو فالو کرتے ہیں تو پھر ہم چیٹ کرنے کو ، دغا کرنے کو جھوٹ بولنے کو کیسے صیح کہہ سکتے ہیں۔ چاہیئے کوئی بھی سوسائٹی ہو جھوٹا جھوٹا ہے اسے جھوٹا ہی کہا جائے گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ میں مرد کو اچھی عورت کے برابر بھی نہیں سمجھتا اچھی عورت میری لیے دیوی ہے مرد کیسے اس کے برابر ہوجائے گا۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube