ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

عروج فاطمہ اورعلی ظفرکا’’لیلیٰ او لیلیٰ‘‘ چھا گیا

SAMAA | - Posted: Jan 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago
SAMAA |
Posted: Jan 6, 2020 | Last Updated: 2 months ago

بلوچی گانایوٹیوب پرایک کروڑ سےزائد باردیکھاگیا

علی ظفر کے بلوچستان کی کم عمرگلوکارہ کے ساتھ گائے جانے والے بلوچی گانے ’’لیلیٰ او لیلیٰ‘‘ نے مقبولیت کے نئے ریکارڈ قائم کردیے۔

یہ گانا 11 اکتوبر 2019 کو ریلیز کیا گیا تھا، جسے ڈھائی ماہ کے عرصے میں شائقین ایک کروڑ سے زائد بار دیکھ چکے ہیں۔

علی ظفر نے مداحوں کو اس ویڈیو کے اتنا زیادہ پسند کیے جانے سے متعلق سوشل سائٹس انسٹا اور ٹوئٹر پربتایا۔ گلوکار نے کیپشن میں مداحوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے خوشی کااظہار کیا اور انسٹا پرعروج کو مبارکباد دی۔

علی ظفرکے ساتھ ڈیبیو کرنے والی عروج فاطمہ کی عمر12سال ہےاوروہ گلوکار کی بہت بڑی مداح ہیں۔

کوئٹہ سے تعلق رکھنے والی عروج فاطمہ نےعلی ظفرکے ساتھ گانے کی خواہش ظاہرکی تھی جس پرگلوکارنےیہ خواہش پوری کرنے کا اعلان کرتے ہوئے ان کے ساتھ ویڈیو بنانے کا اعلان کیا تھا۔

گانے کی ریلیز کے وقت ٹوئٹر پر علی ظفر نے لکھا تھا ’’آج ایک بہت باصلاحیت گلوکارہ کا ڈیبیو ہے۔ 12 سال کی عروج فاطمہ کا تعلق خوبصورت بلوچستان سے ہے۔ اس ویڈیو کو یہ سمجھنے کیلئے دیکھیں کہ خواہ لڑکا ہو یا لڑکی، آپ کو کیوں ہمیشہ اپنے دل اور خوابوں کی ماننی چاہیے۔ لیلیٰ اور لیلیٰ کے ساتھ عروج فاطمہ کو متعارف کروا رہا ہوں، انجوائے‘‘۔

اس گانے کو سب سے پہلے لوک گلوکار استاد فیض محمد بلوچ نے گایا تھا۔فیض محمد بلوچ کے بعد اس گانے کو ایرانی نژاد گلوکار روستم میر لاشاری بھی کوک اسٹوڈیو کیلئے گا چکے ہیں۔

علی ظفر نے اپنی ویڈیو میں گانے میں نیا پن لاتے ہوئے بلوچستان کی ثقافت کو بھی نہایت خوبصورت انداز میں دکھایا ہے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube