ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

اردو ادب کےستاروں کااجتماع:12ویں عالمی کانفرنس

4 days ago

کراچی کے آرٹس کونسل میں 5 سے 8 دسمبر کو عالمی اردو کانفرنس کا میلہ سجنے کو تیار ہے۔ جس میں دنیا بھر سے اردو کے چاہنے والے اپنی پیاس بجھانے کیلئے یہاں کا رخ کریں گے۔

گزشتہ ہونے والی دیگر کانفرنسز کے مقابلے میں اس سال 12 ویں اردو کانفرنس میں سب سے زیادہ سیشنز کا انعقاد کیا گیا ہے۔ اس سال دسمبر میں ہونے والی اردو کانفرنس میں میڈیا، سوشل میڈیا، ادب، فنون لطیفہ، سیاست، بچوں، نوجوان سمیت کئی اہم موضوں پر سیشنز کا اہتمام کیا گیا ہے۔ 5 دسمبر کو کانفرنس کے پہلے روز اس کا آغاز ساڑھے 3 بجے ہوگا۔ کانفرنس کے ابتدائی سیشن میں نامی گرامی حضرات شرکت کرکے کانفرنس کی شان بڑھائیں گے، جس میں زہرا نگاہ، رضا علی عابدی، افتخار عارف، امجد اسلام امجد، کشور ناہید، پیرزادہ قاسم ،مسعود اشعر، حسینہ معین، زاہدہ حنا، وغیرہ شامل ہیں۔

یہ کیا شبنم کا قطرہ کہہ گیا ہے : سمندر تلملا کر رہ گیا ہے

غالب کا اندازہ بیاں

پاکستان اور بھارت کے علاوہ دنیا بھر میں اردو سے پیار کرنے والے افراد دہلی کے غالب جی سے شیکسپیئر یا ورڈزورتھ پر ترجیح دیتے ہیں۔

پوچھتے ہیں وہ کہ غالب کون ہے
کوئی بتلاو کہ ہم بتلائیں کیا

کانفرنس کے پہلے روز مرزا اسد اللہ غالب کی 150 ویں برسی کے موقع پر اردو کے اس بے تاج بادشاہ کے نام کانفرنس کا پہلا سیشن منسوب کیا گیا ہے۔ اگر یہ کہا جائے کہ میر اور غالب پر پوری اردو شاعری کی بنیاد کھڑی ہے تو غلط نہ ہوگا۔ ” غالب : ہمہ رنگ شاعر” کے عنوان سے آڈیٹوریم 1 میں اس سیشن کا انعقاد کیا گیا ہے، جو شام ساڑھے 5 بجے شروع ہوگا۔ اس سیشن کی صدارت شمیم حنفی کریں گے۔

عالمی شہرت یافتہ صدا کار ضیا محی الدین

اس روز 5 دسمبر کو شام ساڑھے 6 بجے “غالب بزبان” کے عنوان سے اسی آڈیٹوریم میں دوسرے سیشن کا انعقاد کیا گیا ہے۔ جس میں عالمی شہرت یافتہ براڈ کاسٹر ضیا محی الدین اپنے خوبصورت آواز اور ادائیگی سے غالب کی شاعری پیش کریں گے۔

سنگ دل رواجوں کی

یہ عمارت کہنہ

اپنے آپ پر نادم

اپنے بوجھ سے لرزاں

جس کا ذرہ ذرہ ہے

خود شکستگی کا ساماں

سب خمیدہ دیواریں

سب جھکی ہوئی گڑیاں

سنگ دل رواجوں کے

خستہ حال زنداں میں

اک صدائے مستانہ

ایک رقص رندانہ

یہ عمارت کہنہ ٹوٹ بھی تو سکتی ہے

یہ اسیر شہزادی چھوٹ بھی تو سکتی ہے

فہمیدہ ریاض

کانفرنس کے پہلے روز قد آور شاعرہ، اسیر شہزادی کے نام سے جانی جانے والی اور آمرانہ رویوں کے خلاف مزاحمت کا روشن استعارہ فہمیدہ ریاض پر بھی ایک خوبصورت سیشن کا انعقاد کیا گیا ہے۔ جس میں کشور ناہید، یاسیمن حمید، نور الہدیٰ شاہ، انیس ہارون، فاطمہ حسن، مجاہد بریلوی اور وسعت اللہ خان سمیت کئی بڑے نام خراج تحسین پیش کرینگے۔ شام ساڑھے 7 بجے شروع ہونے والے اس سیشن کے ساتھ ہی کانفرنس کے پہلے روز کا اختتام ہوگا۔

عالمی کانفرنس دوسرا روز

کانفرنس کے دوسرے روز کا آغاز صبح ساڑھے 10 بجے ہوگا، جہاں شعر اور شاعری سے شغف رکھنے والے افراد کیلئے ایک سیشن کا اہتمام کیا گیا ہے۔ اسی روز دوپہر 3 بجے نئی کتابوں کی رونمائی بھی ہوگی۔

مختلف زبانوں کا اردو سے رشتہ

کانفرنس کے دوسرے روز 6 دسمبر کو پاکستان کی مختلف علاقائی زبانوں میں بھی کئی سیشنز کیے جائیں گے، جس میں سرائیکی، سندھی، پختون، پنجابی، بلوچی شامل ہے۔ شوق رکھنے والے افراد مکالموں کے سیشنز سے بھرپور لطف اندوز ہوسکتے ہیں۔ 12 ویں عالمی کانفرنس میں شرکت کیلئے 20 شرکا پنجاب سے بھی آرہے ہیں۔ جب کہ جاپان سے تعلق رکھنے والے ہیرو جی کتاو کا اور سویاما نے یاسر بھی اس میں شرکت کر رہے ہیں۔

فیض احمد فیض

اپنے نثر اور شعروں سے برصغیر کے لوگوں کو انقلابی بول دینے والے فیض احمد فیض کی شاعری پر بھی دو سیشنز کا اہتمام کیا گیا ہے، یہ فیض کا ہی فیض تھا کہ جس نے بول کہ لب آزاد ہیں تیرے / بول زباں اب تک تیری ہے، جیسے اشعار کو ایشیا کے ایک بڑے حصے میں احتجاج کا گیت بن کر ابھارا۔

مشہور کتاب ایکسپلوڈنگ مینگوز کے مصنف محمد حنیف بھی عالمی کانفرنس میں نظر آئیں گے۔ نعیم بخاری، سہیل وڑائچ، حامد میر، مظہر عباس، ضیا محی الدین، شبنم، انور مسعود، انور مقصود سمیت کئی بڑے نام کانفرنس کی شان بڑھائیں گے۔

علم اور اردو کی پیاس بجھانے والوں کیلئے کانفرنس میں شرکت کا طریقہ بہت آسان ہے، نہ کوئی ٹکٹ، نہ کوئی بکنگ، رنگ، نسل اور عمر کی کوئی حد نہیں۔ ماہرین، ادیب، شعرا، صحافی، ماہر لسانیات کے سیر حاصل گفتگو سے مزین اردو کی ترویج کے ساتھ معلوماتی اور ادبی سیشنز اس کانفرنس کو چار چاند لگائیں گے۔

کراچی میں عالمی اردو کانفرنس کا جادو سر چڑھ کے بولنے لگا

اعلامیے کے مطابق 12ویں عالمی اردو کانفرنس میں کتب میلہ اور تصویری نمائش بھی سجائی جائے گی، جب کہ شاعری، طنز و مزاح، موسیقی، ادب، تھیٹر، فلم، ڈرامہ اور رقص پر خصوصی سیشنز رکھے گئے ہیں۔ اس سال بھارت سے کوئی ادیب یا شاعر موجودہ حالات کے تناظر میں شرکت نہیں کر رہا۔

۔12ویں عالمی اردو کانفرنس کا مکمل پروگرام

مکمل پروگرام کیلئے یہاں کلک کریں۔

 
TOPICS:

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں