ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

جلد شادی کی خبروں پرسارہ خان کا ردعمل

4 weeks ago

اداکارہ سارہ علی خان اور آغا علی پاکستان ڈرامہ انڈسٹری کے 2 معروف نام ہیں۔ دونوں کے بریک اپ کے بعد شو بزحلقوں میں اس حوالے سے مختلف قیاس آرائیاں کی گئی تھیں۔

بعد ازاں آغاعلی نے اس حوالے سے اپنے خیالات کااظہار کیا جبکہ سارہ خان کے حوالے سے کہا گیا کہ وہ اب اپنے والدین کی مرضی سے شادی کا فیصلہ کریں گی۔

سوشل میڈیا پر ان دنوں اداکارہ کی شادی کے حوالے سے خبریں زیرگردش ہیں جس میں مختلف قسم کے دعوے کیے گئے، کسی نے کہا کہ سارہ علی کی شادی طےپاگئی ہے تو کہیں لکھا گیا کہ اداکارہ کی شادی خالص ان کے والدین کی مرضی سے جلد ہورہی ہے۔

سارہ خان نے ایسی تمام خبروں کو مسترد کرتے ہوئے مداحوں سے کہا ہے کہ ’’ کسی چیز پریقین نہ کریں جب تک میں خود سے ایسا کچھ نہ کہوں‘‘۔

اداکارہ نےغلط خبریں پھیلانے والوں سے انسٹا گرام پر اپیل کی کہ میری پرائیویسی کا خیال کرتے ہوئے غلط خبریں پھیلانا بند کریں۔

اپنی انسٹا گرام میں سارہ خان نے واضح کیا کہ ’’میری شادی ابھی نہیں ہورہی ہے‘‘۔

یاد رہے کہ سارہ خان اور اداکار آغا علی کی گہری دوستی کسی رشتے میں بندھنے سے قبل ہی ختم ہوئی تو مختلف قیاس آرائیاں کی گئی تھیں۔ڈراما سیریل ’’ تمہارے ہیں‘‘، ’’ میں ہاری پیا‘‘، ’’ میرے بے وفا‘‘ اور ’’بند کھڑکیاں ‘‘ سمیت کئی معروف ڈراموں کی اس مقبول جوڑی نے بارہا سوشل میڈیا پر ایک دوسرے کو پسند کرنے کے حوالے سے بات کی اور اس سے قبل کہ یہ جوڑی شادی کے بندھن میں بندھتی، دونوں نے راہیں علیحدہ کرلیں جس پر ان کے پرستاروں کو خاصا دھچکا پہنچا تھا۔

دونوں نے انسٹاگرام سمیت دیگر سوشل سائٹس سے ایک دوسرے کو ان فالو کرنے کے علاوہ تصاویر بھی ہٹائیں۔

نجی ٹی وی کے مارننگ شو میں آغا علی نے بریک اپ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایمانداری سے بتاؤں یہ میرے لیے مشکل ترین فیصلہ تھا، کئی ماہ تک میں کام نہیں کرسکا۔ مجھے بہت اکیلا پن محسوس ہوتا تھا جس کا میں مقابلہ نہیں کر پا رہا تھا لیکن پھر وہی بات کہ زندگی کا کام چلتے رہنا ہے۔ اب ہم دونوں ٹھیک ہیں، ہم ہمیشہ ایک دوسرے کی عزت کرتے رہیں گے۔ میں اس کا بے حد احترام کرتا ہوں، وہ ایک بہترین لڑکی ہے۔ ابھی میں اتنا ہی کہوں گا۔

سارہ خان سے رشتہ ٹوٹنے کے حوالے سے نامناسب الفاظ کہنے اور غط قیاس آرائیاں کرنے والوں سے متعلق سوال کے جواب میں آغا علی کا کہناتھا کہ ایسے لوگوں کو اندازہ تک نہیں کہ وہ کیا کہہ رہے ہیں اور اس کے کسی پر کیا اثرات ہو سکتے ہیں۔ اگر میں کچھ کہتا ہوں تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ میری زندگی کسی کی مرہون منت ہے۔

 

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

 
متعلقہ خبریں