فلم’’دُرج‘‘کی تشہیرکیلئے شمعون عباسی کامنفردانداز

SAMAA | - Posted: Oct 22, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Oct 22, 2019 | Last Updated: 2 years ago

سینسر بورڈ کی جانب سے اجازت ملنے کے بعد پاکستان بھرمیں اداکار وہدایتکار شمعون عباسی کی فلم ’’دُرج‘‘25 دسمبر کوسینما گھروں کی زینت بننے جا رہی ہے۔

شمعون عباسی کی اس فلم نے موضوع کے اعتبار سے ٹریلر ریلیز کے بعد سے ہی مقبولیت حاصل کر لی تھی اورپاکستان میں اس قسم کی فلمیں بننے پرخوشی کااظہارکرنے والے شائقین فلم کی ریلیز کے منتظر تھے لیکن فیڈرل سنسر بورڈ کی جانب سے فلم کو منظوری کا سرٹیفکیٹ جاری نہیں کیا گیا تھا۔

فلم کی پاکستان میں کیلئے گرین سگنل ملنے کے بعد سے شمعون عباسی فلم کی تشہیری مہم پرہیں۔ اس حوالے سے کی جانے والی تازہ ترین انسٹا گرام پوسٹ میں انہوں نے فلم بینوں کیلئے کچھ منفرد اندازاختیارکیا۔

انسٹا گرام پر اپنی پہوسٹ میں شمعون نے لکھا کہ کیا آپ میں سال 2013 میں پاکستان میں پیش آنے والے آدم خوری کے واقعات پر بننے والی پہلی فلم دیکھنے کی ہمت ہے؟۔

شمعون عباسی کے مطابق یہ اس موضوع پربرصغیر میں بننے والی پہلی فلم ہے جس میں لواسٹوری میں آنے والا نیا موڑ بھی شامل ہے۔

ہدایتکار نے فلم بینوں کو یہ منفرد فلم دیکھنے کا چیلنج دینے کے ساتھ ساتھ اپنی انسٹاگرام پوسٹ میں یہ بھی واضح کیا کہ سینسر بورڈ نے فلم کو کلیئرقرار دیتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ پاکستان بھر میں اس فلم کو 14 سال سے زائد عمر کے شائقین دیکھ سکتے ہیں۔

فلم ’’ دُرج ‘‘ دراصل سچی کہانی پرمبنی ہے۔ اس میں بھکر کے رہائشی 2 آدم خور بھائیوں کی کہانی بیان کی گئی ہے جو قبریں کھود کر لاشیں نکالتے تھے۔ فلم کی کہانی شمعون عباسی کی ہے۔

فلم ’’ دُرج ‘‘ کی نمائش پر پابندی کیوں عاید کی گئی؟

فلم کے مرکزی کرداروں میں شمعون عباسی اورفلم کی پروڈیوسرشیری شاہ کےعلاوہ مائرہ خان، نعمان جاوید اور حفیظ علی شامل ہیں۔ فلم 18 اکتوبرکو پاکستان بھر میں ریلیزکی جانی تھی۔

یاد رہے کہ اداکار شمعون عباسی نے اپنی فلم ’درج‘کیساتھ 72 ویں کانز فلم فیسٹیول میں بھی شرکت کی تھی۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube