Wednesday, September 30, 2020  | 11 Safar, 1442
ہوم   > اینٹرٹینمنٹ

کیا سجل اوراحد کےنئےڈرامہ پرتنقید جائزہے؟

SAMAA | - Posted: Oct 23, 2019 | Last Updated: 11 months ago
SAMAA |
Posted: Oct 23, 2019 | Last Updated: 11 months ago

سجل علی اوراحد رضا میر کے مداح ڈرامہ سیریلز ’’یقین کا سفر‘‘ اور ’’آنگن ‘‘ کے بعد ان دونوں کو پھر سے ایک ساتھ دیکھنے کے منتظر تھے۔ منگنی کے بعد دونوں نئے ڈرامہ سیریل ’’یہ دل میرا‘‘میں ایک ساتھ جلوہ گر ہورہے ہیں۔

لیکن جب اس ڈرامے کا ٹیزر سجل علی نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شیئرکیا تو ان کے مداحوں کو اس حوالے سے مایوسی کا سامنا کرنا پڑا۔ سوشل میڈیا پر ڈرامے کے ٹیزر کو شدید تنقید کا نشانہ بنایاجا رہا ہے۔

بظاہر رومانوی کہانی پر مبنی دکھائی دینے والےاس ڈرامہ سیریل کی رائٹر فرحت اشتیاق ہیں جنہوں نے بطور ڈائجسٹ رائٹر اپنی پہچان بنانے کے بعد اپنی لکھی گئی تحریروں بن روئے، یقین کا سفر اور ہمسفر کو ڈرامائی تشکیل دی اور خوب داد پائی۔

ڈرامہ سیریل ’’بن روئے ‘‘ پر بعد ازاں فلم بھی بنائی گئی جس میں ماہرہ خان اور ہمایوں سعید نے مرکزی کردارادا کیے تھے۔

فرحت اشتیاق کے تحریر کردہ اس نئے ڈرامہ سیریل کی اصل کہانی تو وقت آنے پر ہی کھلے گی لیکن سامنے آنے والے ٹیزرکو سوشل میڈیا صارفین دفتروں میں خواتین کو ہراساں کرنے کی تشہیر اور اسے پروموٹ کرنا قرار دے رہے ہیں۔ حتیٰ کہ صارفین نے اسے مشہور انگریزی ناول اور فلم ’’ففٹی شیڈز آف گرے ‘‘ جیسا قرار دے دیا۔

ٹیزرمیں انٹرویو کے لیے مقرر پیمانوں جیسے ذہانت اوت تجربے کو ایک طرف رکھتے ہوئے ذاتی نوعیت کے سوالات اور ٹپوری زبان میں بات کی جائے تو ہیرو کو ہیروئن پر لائن مارتے ہوئے دکھایا گیا جو کسی کو آسانی سے ہضم نہیں ہوا۔

ڈرامہ ’’یہ دل میرا‘‘ کے ایک ٹیزر میں احد اورسجل کو شمالی علاقہ جات کی سیرکرتے ہوئےدکھایا گیا ہے جبکہ دوسرے ٹیزرمیں سجل احد کے دفترمیں انٹرویو کیلئے جاتی ہیں جو کہ ان دونوں کی پہلی ملاقات ہے۔

عینا نامی لڑکی کا کردار ادا کرنے والی سجل علی سےانٹرویو میں احد کے پوچھے گئے سوالات ہی دراصل اس ٹیزر کو متنازع بنانے کی وجہ بنے۔ پہلے سجل سے ان کے بارے میں بتانے کو کہا گیا اور پھرجواب سنے بغیر اگلا سوال داغا گیا کیا کہ کھانے میں کیا پسند ہے؟۔

انٹرویو کرنے والے (احد) نے کھانے میں اپنی پسندیدہ ڈش سے متعلق سوال کیا اور جواب میں ’’رائس ‘‘سن کر پوچھا کیسے رائس؟ سجل علی کا جواب تھا بریانی جس پران کے ہونے والے باس نے اوور اسمارٹنیس کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا اچھا تو آپ کو بریانی پسند ہے ،، گڈ اور اچانک ہی آپ سے تم کا سفر طے کرتے ہوئے مزید پوچھا’’تو ابھی تک میں تمہیں انٹرویو میں پسند آیا ہوں؟ ‘‘۔

ہیروئن کامنہ کھولنا تو بنتا ہے لیکن اصل حیرت تو دیکھنے والوں کو ہوئی جنہیں لگا کہ ہماری سوسائٹی میں خواتین سے متعلق اہم ترین مسائل میں سے ایک ہراسانی کا سامنا کرنا ہے، وہاں اگر ملازمت کے مقام پراس کام کو اتنا گلیمرائزڈ اورآسان بنا کرپیش کیا جائے تو کیا اثرات مرتب ہوں گے؟۔

صارفین نے اس حوالے سے کی جانے والی ٹویٹس میں کھل کر اپنی آراء کااظہار کیا۔

اسی حوالے سے سماء ڈیجیٹل نے ڈرامے کی راٗئٹرفرحت اشتیاق سے ان کا موقف جاننے کیلئے بات کی تو ان کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا پر تبصرے پڑھ کر ہنسی آرہی ہے کہ جس چیز کا وجود ہی نہیں اسے کیسے بڑھا چڑھا کر پیش کیا جا رہا ہے۔

رائٹرکے مطابق ٹیزر دیکھ کر منفی تبصرے کرنے والوں کو بعد میں اپنے اندازےغلط ثابت ہونے پر افسوس ہوگا۔ میں کبھی بھی ہراسانی جیسے موضوع کو رومانوی اندازمیں پیش نہیں کرسکتی ہوں۔ ایک ٹیزرسے کہانی کااندازہ نہیں لگایا جاسکتا۔

تنقید کرنے والوں کیلئے فرحت اشتیاق کا مزید کہنا تھا کہ وہ میرے ڈرامہ سیریل ’’اڈاری ‘‘ کو بھی یاد کریں۔

سماء ڈیجیٹل سے بات کرتے ہوئے فرحت اشتیاق نے کہا کہ ڈرامے کی کہانی ابھی کھل کر نہیں بتائی جاسکتی لیکن اس ڈرامے میں کوئی سوشل ایشو اجاگرنہیں کیا گیا۔ یہ رومانس اور تھرلر پر مبنی ہے جس کی کہانی کی مناسبت سے اس میں ’’گرے کیریکٹرز‘‘ یعنی منفی کرداربھی شامل کیے گئے ہیں۔

کرداروں کے حوالے سے بات کرتے ہوئے فرحت نے بتایا کہ احد رضا میر نے ڈرامے میں منفی کردار ہی نبھایا ہے جبکہ سجل علی کا کردار ایک مضبوط لڑکی کا ہے جو اپنی عزت نفس پر سمجھوتہ نہیں کرتی۔ یہ کردار ایک غریب مسکن بیچاری لڑکی کا نہیں ہے۔

دوسری جانب سوشل میڈیا صارفین نے سجل علی کےگزشتہ ڈراموں میں کرداروں کے انتخاب کو مدنظررکھتے ہوئے انہیں بہترین اداکارہ قرار دینے کے ساتھ ساتھ یہ سوال بھی اٹھایا کہ اس ڈرامے میں کیا بہترین ہے؟نہ جانے رائٹرزپیار محبت اور بریک اپ کی کہانیوں سے کب باہرآئیں گے۔

جہاں اتنی تنقید ہورہی ہے وہیں بہت سے ڈرامہ شائقین ایسے بھی ہیں جنہیں اس بات کا احساس ہے کہ ڈرامہ دیکھے بغیر کوئی رائے قائم نہیں کرنی چاہیئے۔

ڈرامے کے دیگر کرداروں میں میراسیٹھی، عدنان صدیقی اور زرنش خان بھی شامل ہیں۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
WhatsApp FaceBook
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube