حمائمہ ملک کے الزامات پر شمعون عباسی کا جواب

SAMAA | - Posted: Jul 26, 2019 | Last Updated: 2 years ago
SAMAA |
Posted: Jul 26, 2019 | Last Updated: 2 years ago

اداکار محسن عباس حیدر کی اہلیہ فاطمہ سہیل کی جانب سے تشدد اور بیوفائی کا الزام سامنے آنے کے بعد حمائمہ ملک نے انسٹا گرام پر اداکار و ہدایتکار شمعون عباسی کے ساتھ اپنی ناکام شادی کے حوالے سے لکھا تھا۔

شمعون عباسی نے سابقہ اہلیہ حمائمہ ملک کی جانب سے عائد کردہ الزامات کا جواب اپنے آفیشل فیس بک پیج پر دیا ہے۔

حمائمہ ملک کے مطابق شادی کے 3 سال تک ظلم برداشت کرتی رہی لیکن اپنے لیے کچھ نہ کرسکی جس پرشرمندہ ہوں۔ ایک 19، 20 سال کی لڑکی اپنی فیملی کو چیختے زخم نہیں دکھا پائی تھی۔ مجھے کئی بار دھمکایا گیا لیکن اب خوفزدہ نہیں ہوں بلکہ اب تک خاموش رہنے پر پچھتا رہی ہوں۔

ان الزامات کے جواب میں فیس بک پر ایک طویل پوسٹ میں شمعون نے لکھا کہ حمائمہ کی جانب سے عائد کیے جانے والے الزامات جان کر صدمہ پہنچا۔ میں اور حمائمہ طلاق کے بعد بھی اچھے دوست تھے اور ایک دوسرے کی عزت کرتے تھے۔۔۔ حتیٰ کہ عوامی مقامات پر ہم ماضی میں شیئر کی جانے والی چیزوں کے حوالے سے مذاق بھی کرتے تھے۔ حمائمہ اب ماشاء اللہ سے ملک اور بیرون ملک ایک بڑا نام ہے اور مجھے ہمیشہ یہ دیکھ کر اچھا محسوس ہوتا ہے کہ وہ خوش ہے اور انڈسٹری میں نام بنتے ہوئے جو وہ کرنا چاہتی تھی کر رہی ہے۔

شمعون نے لکھا کہ حمائمہ میری بیوی تھی گرل فرینڈ نہیں، وہ میرے نکاح میں تھی اس لیے میں حما ئمہ اور اس کی فیملی کی عزت کرتا تھا۔ میرا ان کے ساتھ اچھا وقت گزرا۔ ہماری علیحدگی کو 5 سال کا عرصہ گزر چکا ہے اور کام کرنے ، پیسہ کمانے سے متعلق ہر جوڑے کا اپنا نقطہ نظر ہوتا ہے۔ ہو سکتا ہے کہ چند نکات پر ہمارا اتفاق نہ ہواور کئی بار بحث بھی ہوئی ہو ۔۔۔۔ لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ ہم کبھی ایک دوسرے کو اس حد تک ہرٹ کرنا چاہتے تھے۔

حمائمہ کے عائد کردہ الزامات سے متعلق شمعون نے مزید لکھا کہ ہماری علیحدگی کے بعد وہ پوری دنیا فتح کرنا چاہتی تھی اور میں جانتا تھا کہ وہ کرلے گی۔ میں ہمیشہ یہ سوچتا تھا کہ ہوسکتا ہے میں اس کے کیرئیر کیلئے بہترنہیں ہوں حالانکہ میں جتنی بھی اس کی مدد کرسکتا تھا ، کرنے کی کوشش کی۔ اور ہمیشہ یہ امید رکھی کہ وہ اس آدمی سے شادی کرے گی جو اس کیلئے بہترہے۔ اس نے اپنے کمنٹس میں دوسروں کے ساتھ تعلقات کی بھی نشاندہی کی ہے۔

شمعون کے مطابق حمائمہ کے 7 سال تکلیف دہ علاج میں گزرے اورمیں دکھی تھا کیونکہ میں اسے خوش دیکھنا چاہتا تھا اور وہ یہ بات جانتی تھی کیونکہ جب بھی ہم بات کرتے تھے، ایک دوسرے کو دعا دیتے تھے۔ پتہ نہیں یہ سارا معاملہ اس صورتحال تک کیسے پہنچ گیا۔

میری اور اس کی شادی 3 سال تک رہی ۔ ہوسکتا ہے اس کے دوسرے تعلقات کی نوعیت مجھ سے مختلف ہو لیکن مجھے خوشی ہے کہ ہم اب بھی ایک دوسرے سے بات کرتے ہیں۔ چند ماہ قبل مشترکہ طور پرایک فلم بنانے کیلئے بھی اس نے مجھ سے رابطہ کیا تھا لیکن مصروفیت کے باعث میں نے کہا کہ ہم انشاء اللہ آئندہ سال کچھ کرلیں گے۔ حمائمہ نے اس بات سے اتفاق کیا تھا۔ حتیٰ کہ ہم فیملی کے حوالے سے بھی بات کرتے تھے۔

شمعون نے انکشاف کیا کہ حمائمہ اور میرے بہن بھائی اب بھی رابطے میں ہیں۔ وہ اکثر میری والدہ سے ملنے آتی رہتی ہے اس لیے میری نظر میں سب کچھ ٹھیک تھا۔ علیحدگی کے بات ہمارا کبھی لڑائی جھگڑا نہیں ہوا۔ گزشتہ سالوں میں بہت سی تقریبات میں ہماری ملاقات ہوتی رہی ہے اور وہاں موجود لوگ میری بات کی تائید کریں گے کہ میں اور حمائمہ ہمیشہ پرانے دوستوں کی طرح ملتے تھے اور تاحال ایک قابل عزت فاصلہ اور رویہ رکھا ہوا تھا۔

پوسٹ کے اختتام پر شمعون کا کہنا تھا کہ آخرمیں حمائمہ اور اس کی فیملی کی کامیابی کے لیے دعا کرنا چاہوں گا اور امید کرتا ہوں کہ ہم دونوں اور ہمارے خاندانوں کے لیے یہ الجھن ختم ہوجائے۔ جس جگہ ہم ہیں، وہاں تک پہنچنے کیلئے ہم نے بہت محنت کی ہے۔ اور میرا خیال ہے کہ یہ گھریلو معاملات ہیں جو احتیاط کے ساتھ ڈیل کرنے چاہیئں اور سب کے سامنے نہیں لانا چاہیئں کیونکہ سوشل میڈیا پر یہ دونوں فریقین کو گندا کر دیتے ہیں۔

اداکار نے آخرمیں اپنا اسٹیٹس شیئر کرنے کیلئے بھی کہا تا کہ یہ ان لوگوں تک پہنچے جو معاملے پر اچھے جذبات رکھتے ہیں۔ انہوں نے سوشل میڈیا صارفین سے یہ بھی کہا کہ وہ اس پوسٹ پر حمائمہ کیلئے منفی تبصروں سے گریز کریں۔ یہ پوسٹ دوستانہ ہے نہ کہ سوشل میڈیا پر جنگ یا مقابلے بازی کیلئے۔

انہوں نے سب کا شکریہ ادا کرتے ہوئے مزید لکھا کہ میں جانتا ہوں یہ بہت تفریحی پوسٹ نہیں لیکن یہ بہت ضروری تھی۔

یاد رہے کہ حمائمہ ملک اور شمعون عباسی کی شادی 2010 میں ہوئی تھی جو زیادہ عرصہ برقرار نہ رہ سکی۔ اس جوڑی نے شادی کے 2 سال بعد اپنے راستے الگ کر لیے تھے۔

WhatsApp FaceBook

آپ کے تبصرے :

Your email address will not be published.

متعلقہ خبریں
 
 
 
مقبول خبریں
مقبول خبریں
 
 
 
 
 
Facebook Twitter Youtube