سری دیوی کی موت حادثہ نہیں قتل تھا، ڈائریکٹر جنرل پولیس کا انکشاف

July 11, 2019

کیرالا جیل کے ڈائریکٹرجنرل پولیس رشی راج سنگھ کا کہنا ہے کہ بھارتی اداکارہ سری دیوی کی موت حادثے کی وجہ سے نہیں بلکہ اُنہیں قتل کیا گیا۔

کیرالا کے اخبار میں ڈی جی پی شری راج سنگھ کا سری دیوی کی موت کے حوالے سے مضمون شائع ہوا جس میں انہوں نے تہلکہ خیز انکشاف کئے۔

شری راج سنگھ نے آنجہانی فارنسک سرجن ڈاکٹر عما دھتن کا حوالہ دیتے ہوئے انکشاف کیا کہ ڈاکٹر نے اُنہیں بتایا تھا کہ سری دیوی کی موت قتل کا شاخسانہ ہوسکتی ہے۔

ڈی جی پی کے مطابق آنجہانی ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ ایسے بہت سارے ثبوت ہیں جن سے ثابت ہو سکتا ہے کہ سری دیوی کی موت حادثے کے بجائے ایک قتل تھا۔ سری دیوی اگرنشے میں دھت ہوتیں تب بھی وہ باتھ ٹب کے صرف ایک فٹ گہرے پانی میں ڈوب نہیں سکتی تھیں۔

شری راج سنگھ نے اپنے مضمون میں مزید لکھا کہ بغیر کسی کی ٹانگیں یا سر باتھ ٹب میں نہیں ڈوب سکتیں جب تک کہ کوئی اور ایسا کرنے کیلئے زور نہ لگائے اورباتھ ٹب میں پانی بھی ایک فٹ ہو۔

یاد رہے کہ بھارتی اداکارہ سری دیوی فروری 2018 میں دبئی کے ایک ہوٹل میں قیام کے دوران باتھ ٹب میں ڈوب کر ہلاک ہوگئی تھیں، ان کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ انہوں نے نشہ کر رکھا تھا۔